عقیدہ ختم نبوت کیخلاف ہونیوالی سازشیں ناکام بنائیں گے،یوسف شاہ

  عقیدہ ختم نبوت کیخلاف ہونیوالی سازشیں ناکام بنائیں گے،یوسف شاہ

  

مٹھن کوٹ(نمائندہ خصوصی)جامعہ عبداللہ بن مسعودؓ کے 33ویں سہ روزہ عالمی اجتماع کے دوسرے روز ملک بھر سے فرزندان توحید کے قافلے جوق در جوق پہنچتے رہے، عالمی اجتماع سے جمعیت علماء اسلام (س) کے مرکزی ترجمان سید محمد یوسف شاہ نے خطاب کرتے ہوئے(بقیہ نمبر30صفحہ6پر)

 کہا کہ عقیدہ ختم نبوت ناموس رسالت، اور تحفظ ناموس صحابہ کے لئے اپنی تمام تر صلاحیتیں صرف کریں گے اور ان کے خلاف ہونے والی عالمی سازشوں اور عالمی ایجنڈے کو ناکام بنائیں گے، 295سی کو ختم کرنیوالے خود ختم ہو جائینگے، انہوں نے کہا قطر میں ہونے والا امریکہ اور افغان طالبان کے درمیان ہونے والا امن معاہدہ خطے کی تعمیر و ترقی کے لئے انتہائی ضروری تھا اور افغان طالبان کے ساتھ امن معاہدہ مولانا سمیع الحق کا نظریہ جیت رہا ہے، مولانا سمیع الحق کا جو بیس سال سے مؤقف رہا آج وہ درست ثابت ہو گیا۔ عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے نائب امیر پیر ناصر الدین خاکوانی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ عالمی طاقتوں کے دباؤ پر آئین کی اسلامی شقوں سے چھیڑ خانی کی گئی تو تن من دھن قربان کر کے سخت مزاحمت کریں گے اور عقیدہ ختم نبوت پر کسی قسم کی کوئی لچک نہیں دیکھائی جائے گی۔ مجلس احرار اسلام کے مرکزی رہنما سید عطاء اللہ شاہ ثالث بخاری نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہمارا پیارا ملک پاکستان اسلام اور کلمہ کی بنیاد پر طویل جدو جہد اور لاکھوں قربانیوں کے عوض معرض وجود میں آیا، لیکن آج 73سال گزر گئے اس ملک میں قرآن و سنت کا عادلانہ نظام رائج نہ ہو سکا، ہماری عدالتوں میں اب تک انگریز کا کالا قانون چل رہا ہے، ہمارے ملک کی معیشت سودی نظام پر قائم ہے، جاگیرداروں، وڈیروں، سرداروں، چوہدریوں کی مفاداتی اور سیکولر سیاست نے ملک کو تباہی اور بربادی کے دہانے پر لا کر کھڑا کیا ہے۔  جمعیت علماء اسلام (س) جنوبی پنجاب کے جنرل سیکرٹری قاری عتیق الرحمن ارشد نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مسلمانوں کی ذلت اور رسوائی کی اصل وجہ اسوۂ رسول اؐسے دوری ہے،نبی کریمؐ سے محبت عقیدت کے ساتھ ساتھ اطاعت رسول بھی ضروری ہے۔  جمعیت علماء اسلام (س) صوبہ سندھ کے رہنما مولانا عبدالخالق چاچڑ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ انسانیت کو سامراجی قوتوں نے غلامی کی زنجیروں میں جکڑ رکھا ہے، اسوۂ رسول صلی اللہ علیہ وسلم اور اسلامی انقلاب کے ذریعہ ہی غلامی سے نجات دلائی جا سکتی ہے جمعیت علماء اسلام جنوبی پنجاب کے امیر مفتی محمد اسعد درخواستی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان اور اسلام دشمن قوتیں سن لیں مولانا سمیع الحق کی شہادت کے بعد جمعیت کے کارکن اب پورے ملک میں سد سکندری بن کر شہید ناموس رسالت کے مشن اور نظریہ کی حفاظت کریں گے۔عالمی مجلس اہلسنت کے مبلغ مولانا عبدالرشید ارشد نے عالمی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ عقیدہ ختم نبوت اسلام کا بنیادی عقیدہ اور شریعت محمدی کی اساس اور بنیاد ہے، دین اسلام اللہ کا آخری دین ہے اور یہی مدارِ نجات ہے، انہوں نے کہا قادیانی ختم نبوت کے انکار کی وجہ سے دائرہ اسلام سے خارج ہیں، ختم نبوت کا تحفظ دراصل آپؐ کی ذات اقدس کا تحفظ ہے، انہوں نے کہا آج پھر ایک مرتبہ ختم نبوت قادیانیت کے متعلق قوانین ور ناموس رسالتؐ کے خلاف سازشیں کی جا رہی ہیں، ان اسلام دشمن قوتوں کی اس سازش کو کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔ عالمی اجتماع سے پاکستان علماء کونسل کے مرکزی رہنما سید ابو بکر شاہ، اہلسنت والجماعت کے رہنما سید علی معاویہ شاہ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مدارس اسلام کے قلعے ہیں انہیں کوئی نہیں مٹا سکتا۔ کہا حکومت مدارس کے خلاف کوئی بھی قدم اٹھانے سے باز رہے، ہم مدارس کے تحفظ، اسکی آزادی و خود مختاری کے لیے کسی قربانی سے دریغ نہیں کریں گے۔ پاکستان علماء کونسل کے مرکزی مبلغ مولانا مظفر حمید وٹو نے عالمی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں انقلاب قرآنی تعلیمات پہ عمل کرنے سے آ سکتا ہے، انہوں نے کہا نئی نسل فحاشی کے سیلاب میں بہہ رہی ہے، حکومت نے مغربی کلچرِ طوفان کے لئے مملکت اسلامیہ کے دروازے کھول دیئے ہیں، ہمیں مغربی تہذیب کے آگے بند باندھنا ہوگا، نئی نسل کو دین کی طرف راغب کرنا ہوگا۔ عالمی مجلس اہلسنت کے مولانا عبدالخالق علی پوری، جامعہ عبداللہ بن مسعود کے نائب مہتمم مفتی محمد ارشد درخواستی نے عالمی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کشمیر، شام، فلسطین، برما میں ہزاروں مسلمانوں کا قتل عام اور ان پر ہونے والے مظالم پر اقوام متحدہ اور مسلم ممالک کی خاموشی افسوسناک ہے، ۔ جمعیت علماء اسلام (س) ضلع وہاڑی کے امیر مولانا عبدالعزیز حسانی، جمعیت علماء اسلام (س) ضلع لودھراں کے امیر مولانا ہاشم صدیقی نے عالمی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مولانا سمیع الحق کی شہادت میں علماء، طلباء اور نوجوان نسل کے جذبوں اور حوصلوں کو ایک نئی زندگی بخش دی۔ تلاوت کلام پاک قاری محمد اکرم صابر نے قرآن مجید کی والہانہ انداز میں تلاوت کی، مجمع پر سناٹا چھایا رہا، عجیب سماں بندھا رہا، نعتیہ کلام حسن افضال لاہور، سعد اللہ ندیم خان پور، حفیظ الرحمن عثمانی راجن پور، عاشق برادران نے نعتیہ کلام پیش کیئے۔ عالمی اجتماع سے شیخ الحدیث مولانا منیر اختر، قاری سعید احمد رحیمی ملتان، مولانا محمد صدیق راجن پور کلاں، مفتی محمد ادریس امیر جمعیت علماء اسلام بہاولپور، حضرت مولانا مفتی محمد عمر علی پور، مولانا عبدالستار حنفی، مولانا غلام مصطفی ہتھیجی، حضرت مولانا امیررضا شاہ قمی، مولانا مفتی محمد احمد درخواستی، حافظ حسین احمد درخواستی، مولانا رحمت الرحمن درخواستی، مفتی محمد صدیق درخواستی، مولانا نسیم احمد صدیقی، مولانا محمد شکیل، مولانا سیف اللہ عظیمی، مولوی محمد عاشق، مولانا عبدالشکور دین پوری، مولانا رفیق احمد قاسمی، مولانا ابوبکر درخواستی، مولانا جام ایاز لاڑ مدنی اسٹیج پر موجود تھے۔ 

یوسف شاہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -