پاکستان پوسٹ کو منافع بخش بنانے کیلئے نئی سروسز،منصوبوں پر کام شروع

پاکستان پوسٹ کو منافع بخش بنانے کیلئے نئی سروسز،منصوبوں پر کام شروع

  

ملتان (نیوز رپورٹر) پاکستان پوسٹ کو منافع بخش اور خود مختار ادارہ بنانے کے لیے نئی سروسز اور نئے پراجیکٹ پر کام شروع ہو چکا ہے۔ ان خیالات کا اظہار پاکستان پوسٹ کے ڈائریکٹر جنرل اعجاز احمد منہاس نے پوسٹ ماسٹر جنرل آفس کے دفتر کے وزٹ کے موقع پر منعقدہ تقریب سے کیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ پرائیویٹ پارٹنرز شپ کے تعاون سے نئی سروسز (بقیہ نمبر13صفحہ6پر)

(یو ایم ایس گولڈ) متعارف کرائی جارہی ہیں۔  اس حوالہ سے کوالٹی پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا۔ ڈیجیٹل پوسٹ آفسز کا آغاز ملک بھر میں ہو چکا ہے۔ ڈیلیوری کے نظام کو جدید کرنے کے لیے پوسٹ مینوں کو ڈیجیٹل ڈیوائس اور موٹر سائیکل فراہم کیے جا رہے ہیں۔ اس طرح پوسٹ مین سٹاف فیلڈ میں ڈیلیوری کے ساتھ آرٹیکل بکنگ کا کام بھی کرے گا۔ شارٹ ٹرم میں ریونیو بڑھانے کے لئے کوشش کی جارہی ہے، آف اے ٹی ایف کی تمام شرائط پر عمل درآمد کیا جا رہا ہے۔  سیونگ بینک کی رقومات کا اخراج اسٹیٹ بینک کے رولز اور قواعد کے مطابق کیاجارہاہے۔ ڈیجیٹل پوسٹ بینک اور خودمختیار بینک بنانے کے لیے کوشاں ہیں اور اس طرح کسٹمرز کا اعتماد مزید بہتر بنانے میں کامیابی ہو گی پوسٹ آفس کی سرکاری عمارات کو کو کرایہ پر دینے کے لیے اشتہار سازی شروع ہوچکی ہے اس سے بھی محکمے کا ریونیو اور کسٹمر میں اضافہ ہوگا۔ عنقریب محکمہ ڈاک لاجسٹک سیل قائم کرنے جارہا ہے۔ ڈیلیوری کے نظام کو مزید اور جدید بنانے کے لیے کمیشن کی بنیاد پر عملہ کی بھرتی کی جائے گی۔  ڈاک کے محکمے کے انفراسٹرکچر میں تبدیلی لائی جائے گی اور منافع بخش سروسز متعارف کرائی جائیں گی۔ ریونیو کے اعتبار سے پاکستان بھر میں ملتان سرکل کی پہلی پوزیشن حاصل کرنے پر ڈاکٹر محمد اکرم نواز (پوسٹ ماسٹر جنرل ملتان) سرکل اور ان کی ٹیم کو مبارکباد دی, ڈائریکٹر جنرل نے مزید وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ کسی ملازم کو محکمہ سے نہیں نکالا جائے گا۔ سول سرونٹ ایکٹ 1973 کے تحت ملازمین کے حقوق محفوظ ہوں گے۔ پنشن اور تنخواہوں کی ادائیگی اے جی پی آر کے ذریعے ملازمین کو کی جائے گی۔ پوسٹل لائف انشورنس کمپنی بن چکی ہے،  اس کمپنی کے ملازمین کو ملازمت کا مکمل تحفظ ہوگا، لیکن یہ امر قابل ذکر ہے کہ نا اہل اور کرپٹ ملازم برداشت نہیں کیا جائے گا۔ اس تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر محمد اکرم نواز پوسٹ ماسٹر جنرل نے کہا کہ ڈائریکٹر یٹ سے ملنے والے ٹارگٹ کو ملتان سرکل کی ٹیم پورا کرنے کے لیے ہمیشہ سرگرم رہتی ہے۔ کسٹمر کیئر ہماری پہلی ترجیح ہے عوام کی شکایات نہ ہونے کے برابر ہیں۔ ملتان سرکل کے ڈاکخانہ کمپیوٹرائز کیے جا رہے ہیں۔ ڈاک کی ڈیلیوری کی اپ گریڈیشن کا دائرہ کار سب افسز میں وسیع کیا گیا ہے۔ جس سے عوام کو انٹرنیٹ کے ذریعے آرٹیکل کی ڈلیوری کی رپورٹ گھر بیٹھ کر دیکھی جا سکتی ہے، تقریب کی نظامت کے فرائض اسسٹنٹ پوسٹ ماسٹر جنرل رائے سیف اللہ نے سر انجام دیئے۔ تقریب میں ڈپٹی پوسٹ ماسٹر جنرل نعمان فلاح الدین وردک، ریجنل ڈائریکٹر پوسٹل لائف انشورنس کمپنی شاہد جاوید ملک، چیف پوسٹ ماسٹر ملتان فیاض احمد میکن، ڈویژنل سپریڈنٹ میڈم فائزہ خالد، میڈم عظمیٰ شریف، ظفر حسین شاکر، غفران امجد، محمّد طارق، رانا شوکت علی، اسسٹنٹ ڈائریکٹر محمد اسحاق بلوچ، خرم بہزاد نقوی، اسلم پرویز،  محمد سعید بھٹہ، کے علاوہ ملتان سرکل کے تمام سینئر پوسٹ ماسٹرز، اسسٹنٹ سپریڈنٹ اسٹاف نے شرکت کی۔

پاکستان پوسٹ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -