وفاق کی ناکام زرعی پالیسی نے کسانوں کو گنگال کردیا، اسماعیل راہو

  وفاق کی ناکام زرعی پالیسی نے کسانوں کو گنگال کردیا، اسماعیل راہو

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر)سندھ حکومت نے عمران خان حکومت کو سندھ دشمن اور کسان دشمن قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ وفاق کی ناکام زرعی پالیسی نے زرعی ملک کے کسانوں کو گنگال کردیا ہے۔سندھ کے وزیر زراعت اسماعیل راہو نے  کہا کہ وفاق کی نااہلی کی وجہ سے سندھ کے کسان شدید مالی مشکلا ت کا شکار ہیں۔وفاق نے سندھ کے کسانوں کی اب تک کوئی مددنہیں کی۔جاری بیان میں اسماعیل راہونے کہاکہ کسانوں کو ابتک زرعی قرضے تک نہیں دیئے گئے۔سندھ کا ٹماٹر دو روپے کلو اور ایران کا پچاس روپے میں کلو فروخت ہوا۔ وفاق نے ایران سے ٹماٹر منگواکر، پیاز کی برآمد پر پابندی لگاکرسندھ کے کسانوں کوسڑکوں پر لاکر کھڑا کر دیا، وفاق گندم کی فی من امدادی قیمت 2 ہزار روپے مقرر کرے۔صوبائی وزیر نے کہا کہ اس وقت گندم عام مارکیٹ میں 2 ہزار 200 روپے میں فروخت ہو رہی ہے، درآمد شدہ گندم 2 ہزار 500 سے زائد کی پڑ رہی ہے، درآمدی گندم کا معیار ملکی گندم سے کہیں کم ہے۔وفاقی حکومت باہر سے 2ہزار700 روپے میں گندم درآمد کرنے کے لیے تیار ہے۔انہوں نے کہا کہ اپنے ملک کے کاشتکار سے 2ہزار میں خریدنے کے لیے تیار نہیں، اگر وفاق کی یہ ہی پالیسی رہی تو کاشتکار گندم اگانا بند کر دے گا۔کاشتکاروں کو بینکس قرضے وصولی کے لئے تنگ کر رہے ہیں۔اسماعیل راہو نے کہا کہ حالیہ بارشوں سے ہونے والے نقصانات کی وجہ سے کاشتکار قرض ادا نہیں کرسکتے، ناانصا فیوں کا ازالہ نہ کیاگیا تو سندھ کے کاشتکاروں میں بے چینی اور بڑھ جائے گی.

مزید :

صفحہ آخر -