پی ٹی آئی کے وہ کون سے 2 ارکان ہیں جنہیں کنٹینر میں بند کیا گیا؟ صحافی نے نام بتادیے

پی ٹی آئی کے وہ کون سے 2 ارکان ہیں جنہیں کنٹینر میں بند کیا گیا؟ صحافی نے نام ...
پی ٹی آئی کے وہ کون سے 2 ارکان ہیں جنہیں کنٹینر میں بند کیا گیا؟ صحافی نے نام بتادیے
سورس: YouTube

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) صحافی اسد طور نے دعویٰ کیا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی ) کے جن دو ایم این ایز کو اٹھا کر گولڑہ لے جا کر کنٹینر میں رکھا گیا ان میں شوکت علی بھٹی اور نواب شیر شامل ہیں۔

اپنی یوٹیوب ویڈیو میں اسد طور نے کہا کہ وزیر اعظم کو اعتماد کے ووٹ  سے ایک رات پہلے  تمام اراکین کو پارلیمنٹ لاجز میں لا کر چھوڑا گیا اور انہیں ہدایت کی گئی کہ وہ صبح 10 بجے تک اپنے اپارٹمنٹ سے باہر نہیں آسکتے ۔ ہر فلور کے اوپر ایجنسی کا ایک اہلکار کھڑا کردیا گیا اور پاکستان تحریک انصاف کے تمام اراکین کے نمبر بلاک کردیے گئے، اتحادیوں کے نہ فون بلاک ہوئے اور نہ ہی انہیں کوئی ہدایات دی گئیں، رات گئے گورنر پنجاب چوہدری سرور نے پارلیمنٹ لاجز کا دورہ کیا اور ارکان کی حاضری  بھی لگائی۔

صحافی کے مطابق جن دو ارکان کو گولڑہ لے جا کر کنٹینر میں رکھا گیا ان میں سے ایک شوکت علی بھٹی ہیں جن کا تعلق  حافظ آباد سے ہے اور وہ این اے 87 سے منتخب ہوئے تھے۔ دوسرے ایم این اے نواب شیراین اے 102 فیصل آباد سے منتخب رکن ہیں۔

انہوں نے دعویٰ کیا کہ تحریک انصاف کے ان دونوں ارکان کو رات کے وقت ایجنسیز گولڑہ شریف لے گئیں جہاں دو کنٹینر رکھے گئے تھے، ان میں سے ایک بڑا اور ایک چھوٹا تھا۔ دونوں ارکان سے کنٹینرز میں 

تحقیقات کی گئیں اور انہیں چیزیں بھی دکھائی گئیں، ان سے ان لوگوں کے نام پوچھے گئے جنہوں نے یوسف رضا گیلانی سے ملاقات   کی، ان ارکان پر جسمانی نہیں ذہنی تشدد کیا گیا۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز مسلم لیگ ن کے طویل مشاورتی اجلاس کے بعد میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے مریم نواز نے دعویٰ کیا تھا  کہ تحریک انصاف کے لوگوں کے گلے پر تلوار رکھ کر عمران خان کیلئے اعتماد کا ووٹ حاصل کیا گیا، دو ارکان کو گولڑہ شریف میں کنٹینر میں لے جا کر کئی گھنٹے تک بند رکھا گیا۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -