رات 10بجے کے بعد شادی کی تقریبات پر پابندی، حکومت پنجاب جواب طلب

رات 10بجے کے بعد شادی کی تقریبات پر پابندی، حکومت پنجاب جواب طلب

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے رات 10بجے کے بعد شادی کی تقریبات پر پابندی کے خلاف درخواست پر حکومت پنجاب اور دیگر فریقین کو نوٹس جاری کرتے ہوئے دو ہفتوں میں جواب طلب کر لیا۔لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس عابد عزیز شیخ نے کیس کی سماعت کی۔درخواست گزار مقامی وکیل رضوان ایڈووکیٹ نے موقف اختیار کیا کہ حکومتی تقریبات اور کاروباری ادارے رات دس بجے کے بعد بھی جاری رہتے ہیں مگر شادی جیسے مقدس بندھن کی تقریبات پر پابندی حکومت کا امتیازی سلوک ہے۔انہوں نے کہا کہ دس بجے کے بعد ہر قسم کی تقریبات پر پابندی اور کاروباری سرگرمیوں کے خاتمے کا بھی نوٹیفیکیشن کیا جائے۔انہوں نے عدالت سے استدعا کی کہ شادی کی تقریبات کے حوالے سے امتیازی سلوک کا نوٹس لیتے ہوئے اس پابندی کو ختم کرنا کا حکم دیا جائے۔جس پر عدالت نے حکومت پنجاب اور دیگر فریقین کو نوٹس جاری کرتے ہوئے دو ہفتوں میں جوا ب طلب کر لیا۔

جواب طلب

مزید : صفحہ آخر