بٹ اوڈھ ڈکیت گروہ کے سرغنہ سمیت 7 ملزموں کو گرفتار کر لیا گیا

بٹ اوڈھ ڈکیت گروہ کے سرغنہ سمیت 7 ملزموں کو گرفتار کر لیا گیا

 لاہور ( کرائم سیل ) سی آئی اے نواں کوٹ نے لوٹ مار کی درجنوں وارداتیں کرنے والے بٹ اوڈھ ڈکیت گروہ کے سرغنہ سمیت 7 ملزموں کو گرفتار کرکے 50 لاکھ روپے سے زائد مالیت کا مال مسروقہ، پولیس کی وردیاں اور ناجائز اسلحہ برآمد کر لیا ہے ،ملزموں نے ایلیٹ فورس کی وردیاں پہن کر اور پٹرول بم پھینک کر خوف و ہراس پیدا کر کے مکہ شوگر مل سمیت درجنوں گھروں اوردکانوں کو لوٹنے اور شاہراہوں پر ناکے لگا کر شہریوں کولوٹنے کی درجنوں وارداتیں کی ہیں،واضح ر ہے کہ ڈکیتیاں اور جرائم کرنا ملزموں کا خاندانی پیشہ ہے جو پنجاب کے مختلف اضلاع کی پولیس کو ڈکیتی ، راہزنی اور دیگر سنگین جرائم کی وارداتوں میں مطلوب ہیں۔تفصیلات کے مطابق ہاؤس رابری اور ڈکیتیوں کی وارداتوں کا نوٹس لیتے ہوئے سی سی پی او لاہور چوہدری شفیق احمد نے ڈی آئی جی آپریشنز اور انویسٹی گیشن کو پولیس کی سپیشل ٹیمیں تشکیل دے کران وارداتوں میں ملوث گروہوں کو گرفتار کرنے کا ٹارگٹ دیا ۔ ایس پی سی آئی اے محمد عمر ورک کی سربراہی میں انچارج سی آئی اے نواں کوٹ کی ملک محمد فیاض اور انسپکٹر شمیم پال و دیگر پولیس ٹیم نے مختلف معلومات اور اطلاعات کی روشنی میں ریڈ کر کے 35 رکنی بٹ اوڈھ ڈکیت گروہ کے سرغنہ عارف عرف بٹ اوڈھ کو اس کے دیگر 6 ساتھیوں بہادر علی ، محمد یونس عرف نیلا ، خرم عرف موٹا ، غلام رسول عرف بلا اور علی حسن کو گرفتار کر کے ان کی نشاندہی پر مختلف وارداتوں میں لوٹے ہوئے 38 لاکھ روپے ، لاکھوں کے طلائی زیورات ، موٹر سائیکلیں ، پولیس کی وردیاں اور ناجائز جدید آتشیں اسلحہ برآمد کیا ہے۔یہ امر قابل ذکر ہے کہ ملزمان واردات سے پہلے عالی شان گھروں اور فیکٹریوں کی ریکی کرتے پھر انہیں لوٹنے کے لئے مزدا ٹرک پر جاتے اور ٹرک کو مین روڈ پر کھڑا کرکے خود پیدل گھر ، فیکٹریوں یا ملوں میں داخل ہو جاتے اور یہاں موجود افراد کو یرغمال بنا کر رسیوں سے باندھ کر ڈنڈوں سے بے تحاشہ تشدد کا نشانہ بناتے اورتین چار گھنٹے تسلی سے لوٹ مار کر کے قیمتی اشیاء مزدا ٹرکوں پر لوڈ کرکے فرار ہو جاتے تھے ۔ گروہ کا سرغنہ عارف عرف بٹ اوڈھ دوران واردات مزاحمت پر قتل ، ڈکیتی اور سر قہ بالجبر کے سنگین نوعیت کے مقدمات میں قصور، شیخوپورہ ، ننکانہ صاحب، فیصل آباد ، سرگودھا ، چکوال ، اسلام آباد اور گوجرانوالہ میں گرفتار ہو کر جیل جا چکا ہے جو جیل سے رہا ہوتے ہی دوبارہ گینگ تشکیل دے کر وارداتیں شروع کر دیتا تھا ، دوران تفتیش ملزموں نے مکہ شوگر مل قصور سے 92 لاکھ روپے کیش چھیننے ، کاہنہ میں غلام مصطفےٰ نمبردار کے گھر ایلیٹ فورس کی وردیاں پہن کر 75 لاکھ روپے کی نقدی اور زیورات لوٹنے ، شیخوپورہ میں ایک معروف بزنس مین کے گھر سے 90 لاکھ روپے کی نقدی ، طلائی زیورات اور دیگر قیمتی اشیاء لوٹنے کی وارداتوں کااعتراف کیا،اس کے علاوہ لاہور ،قصور شیخوپورہ ، گوجرانوالہ ، فیصل آباد، سرگودھا ، چکوال اور اسلام آباد میں درجنوں وارداتوں میں پولیس کو مطلوب تھا ۔ ڈی آئی جی انویسٹی گیشن ذوالفقار حمیدنے ڈاکوؤں کے خطرناک اور سفاک گروہ کے سرغنہ سمیت دیگر ملزموں کی گرفتاری پر پولیس ٹیم کے لئے نقد انعامات اور تعریفی اسناد دینے کا اعلان کیا ہے۔

مزید : صفحہ آخر