پائیدار ترقی و خوشحالی زراعت اور تعلیم کے فروغ سے مشروط ہے : میجر (ر) ارجاز محمد خان

پائیدار ترقی و خوشحالی زراعت اور تعلیم کے فروغ سے مشروط ہے : میجر (ر) ارجاز ...

  

لاہور (بزنس رپورٹر) پاکستان میں زرعی مصنوعات تیار کرنے والے صف اول کے ادارے علی اکبر گروپ کے ذیلی ادارے ڈی جے سی کی سالانہ سٹار سیلز کانفرنس کا انعقاد گزشتہ روز مقامی ہوٹل میں کیا گیا جس کے مہمان خصوصی علی اکبر گروپ کے چیئرمین میجر (ر) اعجاز احمد خان تھے۔ کانفرنس میں علی اکبر گروپ کے منیجنگ ڈائریکٹر سعد اکبر خان، ڈائریکٹر سیڈز احسن اکبر خان، ڈائریکٹرز وقار احمد خان، بلال اکبر خان، ڈائریکٹر مارکیٹنگ اینڈ سیلز فاروق ملک، منیجر مارکیٹنگ عبدالناصر خان، محمود ایاز خان و دیگر زرعی ماہرین اور ملک بھر سے ڈی جے سی کے ڈیلرز اور فیلڈ افسران نے شرکت کی۔ تفصیلات کے مطابق سیلز کانفرنس میں شرکت کرنے والے ڈیلرز اور فیلڈ افسران کو ڈی جے سی کی زرعی ادویات کے خواص اور ان کی جدید کیمسٹری سے روشناس کروایا گیا تاکہ وہ کسان کی بہتر انداز میں رہنمائی کرکے زراعت کو جدید خطوط پر استوار کرکے فی ایکڑ پیداوار بڑھانے میں اپنا کردار ادا کر سکیں۔ ڈی جے سی سیلز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے چیئرمین علی اکبر گروپ میجر (ر) اعجاز محمد خان نے کہا زراعت ہماری معیشت میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتی ہے جن سالوں میں زرعی پیداوار بہتر ہوتی ہے انہی سالوں میں جی ڈی پی گروتھ ریٹ ترقی کی جانب بڑھتا نظر آتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ جدید ترقی یافتہ زراعت اور عصر حاضر کے تقاضوں سے ہم آہنگ نظام تعلیم ہی پائیدار ترقی و خوشحالی کا ضامن ہے، اگر ہم نے آگے بڑھنا ہے اور خود انحصاری کی منزل حاصل کرنا ہے تو ہمیں زراعت اور علم پر مبنی معاشرے کو فروغ دینا ہوگا۔ علی اکبر گروپ کے ایم ڈی سعد اکبر خان نے اپنے خطاب میں کہا کہ ہماری تمام تر توجہ کا مرکز اور اس سیلز کانفرنس کے انعقاد کا مقصد صرف اور صرف فی ایکڑ پیداوار بڑھا کر کسان کی خوشحالی اور پاکستان کا محفوظ مستقبل ہے۔ آنے والے وقت میں فوڈ سکیورٹی ایک اہم ترین ایشو بن رہا ہے۔ اس چیلنج کا مقابلہ کرنے کے لئے ضروری ہے کہ ہم آج اس کی تیاری کریں اور ہر فصل میں خود کفالت کی منزل کو یقینی بنائیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کے روشن اور محفوظ مستقبل کے لئے حکومت، اداروں، ماہرین اور افراد تمام کو خلوص نیت سے اپنا اپنا کردار ادا کرنا ہوگا۔ ڈائریکٹر سیڈز اور پی سی پی اے کے سابق چیئرمین احسن اکبر خان نے کہا کہ ڈالر کی روز بروز بڑھتی ہوئی قیمت سے زرعی ادویات اور کھاد کے نرخ بڑھ رہے ہیں جس سے کسان مزید مشکلات کا شکار ہوگا۔ انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ کھادوں پر عائد جنرل سیلز ٹیکس فوری طور پر ختم کرکے کسانوں کو ریلیف فراہم کیا جائے۔ علی اکبر گروپ کے ڈائریکٹر مارکیٹنگ اینڈ سیلز فاروق ملک نے کہا جدید ٹیکنالوجی کو اختیار کرکے سبز انقلاب برپا کیا جا سکتا ہے۔ سیلز کانفرنس سے دیگر ماہرین نے بھی خطاب کیا اور شرکاء کو ادویات کے موثر اور انسانی صحت کے حوالے سے محفوظ استعمال کے حوالے سے بریف کیا۔ تقریب کے آخر میں شرکاء کو بذریعہ قرعہ اندازی قیمتی انعامات سے نوازا گیا۔

مزید :

کامرس -