چیف جسٹس وہ کام کر رہے جو حکومت کو کرنا چاہیے تھا : عمران خان

چیف جسٹس وہ کام کر رہے جو حکومت کو کرنا چاہیے تھا : عمران خان

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کا کہنا ہے پاکستان میں فراہمی صحت کا نظام بدلنا ان کی تر جیحا ت میں شامل ہے، گزشتہ روزاسلام اباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے عمران خان نے کہا چیف جسٹس کے خیبر پختونخوا کے ہسپتالوں کا نو ٹس لینے کے اقدام کو خوش آمدید کرتے ہیں، چیف جسٹس وہ کام کر رہے ہیں جو حکومت کو کرنا چاہیے تھا، تاہم ان سے درخواست ہے وہ اس سلسلے میں غیر جانبدار ماہرین کی کمیٹی بنائیں،تاکہ پتہ چلے کے پی حکومت نے عوام کیلئے کام کیا ہے۔عمران خان نے کہا 40 سال میں کسی نے کے پی کے میں ہسپتالوں میں اصلاحات نہیں کیں، لوگ بار بار پوچھتے ہیں کے پی میں پی ٹی آئی کی حکومت نے کیا کیا، میں چیلنج کرتا ہوں 40 سال میں کے پی میں وہ کام نہیں ہوا جو پی ٹی آئی نے کیا۔ کے پی میں ہسپتالوں کی بہتری کیلئے پی ٹی آئی نے پانچ سال سخت محنت کی، سب سے پہلے ہیلتھ ریفارمز ایکٹ لے کر آئے، ساتھ ہی ڈاکٹرز برادری کو بھی منانا پڑا، انہیں سمجھایا سرکاری ہسپتالوں کو ٹھیک کرنے کیلئے ہیلتھ ریفارمز ضروری ہیں، جب ہم نے صحت اصلاحات کو نافذ کرنا شروع کیا تو بہت سے مسائل کا سامنا کرنا پڑا، خودچاہتا ہوں چیف جسٹس کے پی کے میں آئیں ے اوریہ جانیں ہمیں کن مسائل سے گزرنا پڑا۔عمران خان نے کہا سب سے بڑا چیلنج سرکاری ہسپتالوں کے معیار کو اوپر لانا ، سالوں پرانے نظام میں موجود خامیوں کو ختم اوراسے درست سمیت میں لانا تھا، نئے ہسپتال میں تو ہم نظام خود بناتے ہیں وہاں اتنی مشکل نہیں ہوتی تاہم پرانے ہسپتالوں میں رائج نظام کو بدلنا مشکل ہوتا ہے۔اس کیلئے ہم نے قابل ڈاکٹرز کو مختلف ہسپتالوں کے بو ر ڈ میں شامل کیا تاکہ وہ ہسپتالوں کو اوپر لاسکیں، یہ ڈاکٹرز کوئی پیسے نہیں لیتے، اپنے خرچے پر آتے جاتے ہیں، پورے پاکستان کو ان کا شکریہ ادا کرنا چاہیے، ایسے کنسلٹنٹس کیلئے حکومت کو کروڑوں روپے خرچ کرنے پڑتے ہیں۔

مزید :

صفحہ اول -