سی پیک جیسے مزید منصوبے بنانا ہوں گے ، ملکی تاریخ میں دوسری حکومت مدت پوری کر رہی ہے : وزیر اعظم

سی پیک جیسے مزید منصوبے بنانا ہوں گے ، ملکی تاریخ میں دوسری حکومت مدت پوری کر ...

  

اسلام آباد (آئی این پی228 آن لائن )وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ اقتصادی راہداری علاقائی روابط کا وژن ہے، اقتصادی زونز سے روزگار کے مواقع بڑھیں گے، ملکی تاریخ میں دوسری حکومت مدت پوری کررہی ہے، پاکستان سرمایہ کاری کیلئے پہلی ترجیح بن رہا ہے،ملک میں پہلی بار ٹیکس ریفارمز کی گئی ہیں، سی پیک مسابقت کی فضاسے ترقی کا سبب بنے گا، ملکی ترقیاتی پالیسیوں پر اتفاق رائے سے عمل پیرا ہیں۔ایک کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ درپیش چیلنجز پر کامیابی سے قابو پایا ہے، 5سال میں چیلنجز کے باوجود ترقی کی جانب بڑھے ہیں، ملک میں بنیادی ڈھانچے کا فقدان تھا، گیس کی قلت کا خاتمہ کیا ہے، بجلی کی قلت پر قابو پانے کیلئے موثر اقدامات کئے ہیں، پاکستان سے دہشت گردوں کی پناہ گاہوں کا خاتمہ کر دیا ہے، بنیادی ڈھانچے کی تعمیر میں ٹھوس سرمایہ کاری کی، اقتصادی راہداری علاقائی روابط کا وژن ہے، 1700کلومیٹر طویل موٹرویز بنارہے ہیں، اقتصادی زونز کے قیام کیلئے بھی سرمایہ کاری کی، اقتصادی زونز سے روزگار کے مواقع بڑھیں گے، سی پیک مسابقت کی فضاسے ترقی کا سبب بنے گا، ملک میں پہلی بار ٹیکس ریفارمز کی گئی ہیں، ملکی تاریخ میں دوسری حکومت مدت پوری کررہی ہے۔ وزیراعظم نے کہا کہ ملکی ترقیاتی پالیسیوں پر اتفاق رائے سے عمل پیرا ہیں، شرح نمو کو 9فیصد تک لے جانا انتہائی ضروری ہے، پاکستان سرمایہ کاروں کیلئے پہلی ترجیح بن رہا ہے، نہ صرف ملک بلکہ علاقائی سرمایہ کاری کا فروغ چاہتے ہیں۔وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ سی پیک پاکستان اور چین کیلئے ہی نہیں بلکہ پورے خطے کی ترقی اور خوشحالی کا ضامن ہے چاہ بہار بندر گاہ گوادر کیلئے چیلنچ نہیں بلکہ وہ بھی علاقائی تجارت کے لئے معاون ثابت ہوگی کیونکہ دنیا کی 80فیصد تجارت سمندر کے راستے ہوتی ہے ان خیالات کا اظہار وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے بحریہ یونیورسٹی کے انٹرنیشنل میری ٹائم سپوزیم سے خطاب کے دوران کیا جہاں پر وہ بطور مہمان خصوصی تھے انہوں نے کہا کہ موجودہ حالات اور واقعات کے پیش نظر میری ٹائم سمپوزیم کا انعقاد اہمیت کا حامل ہے کیونکہ پاکستان سے منسلک تجارتی خطہ دنیا کا 40فیصد ہے جو بہت اہمیت رکھتا ہے جغرافیائی حثیت سے استفادہ کیلئے پہلے سے اقدامات کرنا ضروری ہوتے ہیں اور اس کیلئے روابط بھی ممالک سے قائم ہونے چاہیے کیونکہ ہمارا خطہ توانائی اور قدرتی وسائل سے مالامال ہے اور پاکستان وسط ایشیائی ریاستوں کو تجارتی رسائی بہترین طریقے سے دے سکتا ہے افغانستان سکیورٹی کے مسائل سے دوچار ہے اس لیے انہیں بھی معاشی ترقی کے لئے اپنی سکیورٹی کو بہتر بنانے کیلئے اقدامات کرنے چاہیے تاکہ وہ بھی دنیاوی ترقی کی صف میں شامل ہوجائے، بلوچستان میں حکومت نے 12سول کلومیٹر شاہرایءں بنائی ہیں اور موٹر وے بھی بنائی ہے جوکہ بہترین ذرائع کیلئے کارآمد ثابت ہورہی ہے علاقائی روابط اور تجارتی ترقی و خوشحالی کیلئے موٹر ویز کا ہونا لازمی جزؤ ہے اس وقت پاکستان چین کے ساتھ مل کر کام کررہا ہے جس سے پاکستان کی معیشت مستحکم ہورہی ہے جس کا اندازہ رواں سال کی 6 فیصد شرح نمو سے لگایا جاسکتا ہے وزیر اعظم نے کہا کہ پاک بحریہ چیلنجز سے نمٹنے کیلئے بہترین صلاحیتوں کا مظاہرہ کررہی ہے اور وہ کسی بھی جارحیت کا جواب دینے کی صلاحیت رکھتی ہے ا ایران کی چاہ بہار بندر گاہ گوادر کیلئے چیلنج نہیں بلکہ چاہ بہار بھی سی پیک کی طرح علاقائی تجارت میں معاون ثابت ہوگی۔صدر آزاد جموں و کشمیر مسعود خان نے کہا کہ پاکستان بیلٹ اینڈ روڈ منصوبے کا اہم ترین حصہ ہے اس منصوبے سے ملکوں ہی نہیں بلکہ اقواموں کے درمیان بھی تعاون بڑھے گا جو کہ انسانی تاریخ کا بے مثال منصوبہ ثابت ہوگا مسعود خان نے کہا کہ بحر ہند میں تجارتی سرگرمیاں فروغ پا رہی ہیں کیونکہ بحر ہند کے ساتھ دنیا کی اہم ترین بندرگاہیں شامل ہیں اس لیے سی پیک سے گوادر ہی نہیں مشرق وشطیٰ کی بندر گاہیں معاشی مرکز بن جائیں گی،چین کے پروفیسر ڈاکٹر تانگ فلگ شنگ نیاردو میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستانیوں کی سی پیک کے ساتھ محبت دیکھ کر بہت خوشی ہوتی ہے پاکستان اور چین کی عوام مل کر اس منصوبے کو آگے لے جائے گی اس لیے سی پیک پاکستان کی ترقی اور خوشحالی کیلئے بھی اہم سنگ میل ثابت ہوگا ۔چین پاکستان کو خوشحال ترقی یافتہ اور پرامن دیکھنا چاہتا ہے اور ہم خواب نہیں بلکہ عملی کوشش کرکے دکھاتے ہیں سی پیک منصوبہ عوام کے دلوں میں روابط بنائے گا او اس سے تعلقات کو مزید فروغ ملے گا، سی پیک کے تحت پاکستان میں توانائی کے شعبے پر کام ہورہا ہے پاکستان کے ساتھ معاشی ہی نہیں بلکہ تعلیمی سی پیک بھی مکمل کریں گے کیونکہ ون بیلٹ ون روڈ منصوبہ چینی صدر کا ویژن ہے پروفیسر ڈاکٹر تانگ فنگ شنگ نے کہا کہ نائن الیون کے بعد پاکستان کو مالی، معاشی اور جانی سطح پر کافی نقصان اٹھنا پڑا ہے اور اب چین پاکستان کو اپنے ساتھ ترقی کے راستے پر لے کر چلنا چاہتا ہے پاک بحریہ کے سربراہ ایڈ مرل ظفر محمود عباسی نے کہا کہ شرکاء کی تجاویز اور آراء سے استفادہ ہوا ہے اور پاک بحریہ میری ٹائم مسائل سے بخوبی واقف ہے اور اس کے حل کیلئے بھی اقدامات کررہی ہے ا کہ ہم جانتے ہیں کہ سی پیک کے تناظر میں میری ٹائم انتہائی اہمیت کا حامل ہے، بیلٹ اینڈ روڈ منصوبے سے خطے کی ممالک آپس میں جڑ جائیں گے اور اس سے روابط میں بھی اضافہ ہوگا حکومت بحریہ کی ضروریات پوری کررہی ہے اور پاکستان معاشی استحکام کی جانب گامزن ہے۔ وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ ہمارا خطہ توانائی اور قدرتی وسائل سے مالا مال ہے‘ پاکستان وسط ایشیائی ریاستوں کو تجارتی رسائی دے سکتا ہے‘ خطے کی ترقی کے لئے سی پیک جیسے منصوبے بنانا ہوں گے‘ بلوچستان میں بارہ سو کلومیٹر شاہرائیں تعمیر کیں‘ موٹر ویز سے رابطے کے لئے بہترین ذرائع میسر آرہے ہیں‘ پاک بحریہ چیلنجز سے نمٹنے کے لئے بہترین صلاحیتوں کا مظاہرہ کررہی ہے۔ دنیا کی اسی فیصد تجارت سمندر کے ذریعے ہوتی ہے جغرافیائی حیثیت کو روابط کے لئے استعمال کیا جانا چاہئے۔ ہمارا خطہ توانائی اور قدرتی وسائل سے مالا مال ہے پاکستان وسط ایشیائی ریاستوں کو تجارتی رسائی دے سکتا ہے۔ افغا نستان سکیورٹی مسائل سے دوچار ہے خطے کی ترقی کے لئے سی پیک جیسے منصوبے بنانا ہوں گے۔ ہمیں چین کے ساتھ مل کر کام کرنے کی ضرورت ہے۔ علاقائی روابط اور تجارت ترقی و خوشحالی کے لئے ضروری ہیں۔ موٹر ویز سے رابطے کے بہترین ذرائع میسر آرہے ہیں۔ پاکستانی معیشت مستحکم ہورہی ہے رواں سال تقریباً چھ فیصد شرح نمو حاصل کی۔ پاک بحریہ چیلنجز سے نمٹنے کے لئے بہترین صلاحیتوں کا مظاہرہ کررہی ہے وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ بھارتی افواج نے کشمیریوں کے خلاف دہشت گردی کی نئی لہر شروع کی ہے، بھارت آزاد مبصرین کو مقبوضہ کشمیر تک رسائی فراہم نہیں کر رہا، کشمیری 5نسلوں سے حق خود ارادیت کیلئے جدوجہد کررہے ہیں، اقوام متحدہ کشمیریوں کا خون بہنے سے روکنے کیلئے کردار ادا کرے۔ وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم پر ردعمل اور بھارتی فوج کے مظالم اور انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ بھارتی افواج معصوم کشمیریوں کو شہید کررہی ہے، بھارتی افواج نے کشمیریوں کے خلاف دہشت گردی کی نئی لہر شروع کی ہے، مقبوضہ

مزید :

صفحہ اول -