اہل خانہ کے احسن اقبال کوبیرون ملک لے جانے کیلئے صلاح مشورے

اہل خانہ کے احسن اقبال کوبیرون ملک لے جانے کیلئے صلاح مشورے

  

لاہور(جاوید اقبال) وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال کو علاج معالجہ کیلئے بیرون ملک لے جانے کیلئے صلاح مشورے شروع ہو گئے ہیں دوسری طرف وزیر داخلہ کے اہل خانہ نے برطانیہ اور امریکہ میں اپنے عزیزو اقارب سے رابطے شروع کر دئیے ہیں اور انہیں رپورٹس بھی بھجوا دی ہیں ۔تیسری طرف ڈاکڑز ہسپتال اور شریف میڈیکل سٹی کے سینئرز ڈاکٹروں نے وزیر داخلہ کے اہل خانہ کو پیشکش کی ہے کہ انہیں اگر مذکورہ ہسپتالوں میں منتقل کر لیا جائے تو بہتر اور جدید سہولیات میسر آ سکتی ہیں ۔ذرائع کا کہنا ہے کہ وزیر داخلہ کے اہل خانہ اور عزیزو اقارب نے مریض کے پیٹ میں پیوست گولی کی موجودگی سے پریشان ہیں اور وہ جلد از جلد گولی نکلوانے کے خواہش مند ہیں ۔اسکے لئے وہ بیرون ملک لے جانے کی خواہش رکھتے ہیں وزیر داخلہ کے اہل خانہ نے صوبہ اور مرکزی حکومت سے اجازت بھی مانگی ہے اور مشورہ بھی ۔دوسری طرف ڈاکٹروں نے یقین دہانی کرائی ہے کہ وزیر داخلہ کو تمام سہولیات دی جا رہی ہیں گھبرانے کی ضرورت نہیں ۔ڈاکٹرز نے واضع کر دیا ہے کہ جس جگہ پیٹ کے اندر گولی موجود ہے اگر یہ پڑی بھی رہے اس کا کوئی نقصان نہیں ہے اگر اسے نکالا جاتا ہے تو کوئی بھی ویسل ڈیمیج ہونے کا پچاس فیصد خدشہ موجود ہے گولی کا پیٹ کے اندر موجود رہنے کا گوئی نقصان نہیں ہے ایسے درجنوں کیس موجود ہیں جو کامیابی سے زندگی گزار رہے ہیں۔ وزیر داخلہ کے بھائی بیٹا اور دیگر اہل خانہ ڈاکٹرز کے اس موقف سے اتفاق نہیں کرتے اور ان کے خدشات موجود ہیں اور وہ احسن اقبال کو علاج کیلئے بیرون ملک لے جانا چاہتے ہیں ۔اس کیلئے انھیں قائد مسلم لیگ (ن) کے نوازشریف ،وزیر اعظم اوروزیر اعلی شہباز شریف کے گرین سگنل کا انتظار ہے ۔

بیرون ملک

Back t

مزید :

صفحہ اول -