میڈیا اداروں کو واجبات کی ادائیگی ، سپریم کورٹ نے 4 رکنی کمیٹی بنا دی

میڈیا اداروں کو واجبات کی ادائیگی ، سپریم کورٹ نے 4 رکنی کمیٹی بنا دی

  

اسلام آباد( خصوصی رپورٹ) سپریم کورٹ نے میڈیا کو سرکاری اشتہارات کی رقوم کی ادائیگیوں کے حوالے سے 4 رکنی کمیٹی قائم کردی ہے جو موجودہ دور حکومت میں دیئے گئے، ا شتہارات کی ادائیگیوں کے طریقہ کار اور تفصیلات پر اپنی رپورٹ دے گی۔ کمیٹی پرنسپل انفارمیشن آفیسر محمدسلیم , سیکرٹری آل پاکستان نیوز پیپرز سوسائٹی (اے پی این ایس)سرمدعلی ا،صدر ایڈورٹائزنگ ایسوسی ایشن جواد ہمایوں اور ایکسپریس کے اعجاز الحق پر مشتمل ہوگی، صوبائی اشتہارات کے معاملات میں صوبائی سیکرٹریزبرائے اطلاعات کمیٹی کے ارکان ہو نگے۔ چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے اپنے ریمارکس میں کہا ہے کہ حکومت ایک ہفتے میں ادائیگیاں کرے اس کے بعد اشتہاراتی کمپنیاں تین دن میں پرنٹ میڈیا کے اداروں کو ادائیگیاں کریں۔ چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے پرنٹ میڈیا اشتہارات کیس کی سماعت کا آغاز کیا تو چیف جسٹس نے سوال اٹھایا کہ اشتہاراتی کمپنیا ں پرنٹ میڈیا کے اداروں کو ادائیگیاں کیوں نہیں کر رہیں؟ اس دوران وکیل کا کہنا تھا کہ حکومت و صوبائی حکومتیں اشتہارات کی ادائیگیاں نہیں کر رہیں۔ وفاقی سیکرٹری برائے اطلاعات احمد نواز سکھیرا کا کہنا تھا کہ وفاقی حکومت کے واجبات کی منظوری آج(منگل) تک ہو جائے گی۔رواں سال کے 28 فروری تک کے واجبات کی ادائیگی کے حوالے سے سمری وزیر اعظم کو بھجوا دی ہے۔ ا حکومت کے گزشتہ پانچ سال کے واجبات کا کوئی تنازع نہیں ، چیف جسٹس نے کہاکہ اگراس حکومت کا پانچ سال کی ادائیگیوں کا تنازع نہیں تو حکومت اپنے دور کی ادائیگیاں کر ے۔،سیکرٹری اطلاعات کا کہنا تھا کہ رواں ہفتے میں واجبات کلیئر کروا لیں گے ، پرنٹ میڈیا کے 401 ملین کی رقم ایک ہفتے میں ادائیگی ہو جائے گی۔اچیف جسٹس کو بتایا گیا کہ اشتہاراتی کمپنیاں مہینوں تک ہمیں ادائیگی نہیں کرتیں جبکہ آپ نے گذشتہ سماعت پریقین دلایا تھا کہ عدالت خود واجبات کی ادائیگی کو یقینی بنائے گی اس پر چیف جسٹس نے کہاکہ حکومت ادائیگی کرے تو اشتہاراتی کمپنیاں 3 دن میں پرنٹ میڈیا کے اداروں کو ادائیگیاں کریں چیف جسٹس نے 4 رکنی کمیٹی تشکیل دیتے ہوئے کہا کہ حکومت ایک ہفتے میں اشتہارات کی ادائیگیاں کرے اوراس کے بعد اشتہاراتی کمپنیاں تین دن میں پرنٹ میڈیا کے اداروں کوان کے واجبات دیں کمیٹی واجبات کی کل رقم اور ادائیگیوں کا طریقہ کار طے کرے گی ، چیف جسٹس نے کہاکہ کمیٹی منصف اور ثالث کی حیثیت سے اپنا کام کرے اور اپنی رپورٹ عدالت میں جمع کرائے۔160

سپریم کورٹ اشتہارات

کراچی (خصوصی رپورٹ)آل پاکستان نیوز پیپرز سوسائٹی اور پاکستان ایڈورٹائزنگ ایسوسی ایشن نے وفاقی اور صوبائی حکومتوں کو میڈیا کو جاری کئے گئے اشتہارات کے واجبات کی ادائیگی کا حکم جاری کرنے پر چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کا تہہ دل سے شکریہ ادا کیا ہے ۔ مشترکہ بیان میں دونوں تنظیموں نے اس خیال کا اظہار کیا ہے کہ سپریم کورٹ کے ان احکامات کی روشنی میں مالی مشکلات کا شکار ذرائع ابلاغ کے اداروں کو بر وقت ادائیگی میں مدد ملے گی۔ اس سے قبل چیف جسٹس آف پاکستان نے پرنٹ میڈیا کے واجبات کی تصدیق اور بلا تاخیر ادائیگی کے لئے پی آئی او محمد سلیم ،ے پی این اس کے سیکرٹری جنرل سرمد علیِ پاکستان ایڈورٹائزنگ ایسو سی ایشن کے جواد ہمایوں اورروزنامہ ایکسپریس کے اعجاز الحق اور صوبائی سیکرٹریوں پر مشتمل کمیٹی قائم کی ہے۔

اے پی این ایس

مزید :

صفحہ اول -