وزیر اعظم سمیت اہم شخصیات اور حساس مقامات کی سکیورٹی بڑھانے کا فیصلہ

وزیر اعظم سمیت اہم شخصیات اور حساس مقامات کی سکیورٹی بڑھانے کا فیصلہ

  

لا ہور ( رپورٹ ، یو نس با ٹھ )قانون نافذ کرنے والے اداروں نے رمضان المبارک کے دوران دہشت گر دی کے خطر ے کے پیش نظر وزیراعظم ،وزیر اعلی ٰ ،اہم سیاسی شخصیات، ججز اور حساس مقامات کی سکیورٹی بڑھانے کا فیصلہ کرلیا ۔پنجاب پولیس ، حساس اداروں ،سپیشل برانچ ،کاؤنٹر ٹیررازم سمیت ایسی ایجنسیاں جو دہشت گردوں کے خطرناک عزائم کو روکنے کے ذمہ دار ہیں ،انہیں اہم ٹاسک دیا گیا ہے۔پولیس سمیت دیگر قانون نافذ کرنیوالے اداروں نے تمام انتظامات مکمل کر لئے ہیں اور اس سلسلہ میں ذمہ دار افسروں نے گزشتہ روز انہیں حتمی شکل دی ۔ صوبائی دارالحکومت سمیت پنجاب کے دیگر بڑے شہروں میں سکیورٹی کو ہائی الرٹ کر دیا گیا جبکہ داخلی راستوں پر خصوصی چیکنگ کے احکامات جاری کر کے اہلکاروں کی تعداد بڑھا دی گئی اور ہر گاڑی کی جامع تلاشی لی جارہی ہے ۔ بتایا گیا ہے کہ حفاظتی انتظامات کے سلسلہ میں تمام بڑی مساجد ‘ امام بارگاہوں اور عبادتگاہوں کی انتظامیہ سے مل کر سکیورٹی پلان ترتیب دیا گیا ہے۔ اما م با ر گا ہو ں،مساجد اور عبادت گاہوں کی اپنی سکیورٹی بھی حفاظتی ڈیوٹی پر موجود ہو گی جبکہ سحری اور افطاری کے اوقات میں مساجد کے قر یب پارکنگ کو ممنوعہ قرار دیا گیا جبکہ نمازیوں کو میٹل ڈیٹکٹر سے چیک کرنے کے بعد مساجد میں داخل ہونے کی اجازت دی جائے گی ۔علاوہ ازیں دستر خوان والے مقامات پر سادہ کپڑوں میں بھی اہلکار تعینات کیے جائیں گئے ۔کیپٹل سٹی پولیس چیف کیپٹن امین وینس نے کہا ہے کہ لاہور پولیس رمضان المبارک کے موقع پرشہریوں کو مکمل امن وامان ا ورسکیورٹی فراہم کرے گی اور تمام ڈویژنل ایس پیز ، سپر وائزری پولیس آفیسرز ، ایس ایچ اوز ، اسسٹنٹ سب انسپکٹراور سب انسپکٹرزموبائل سکواڈز کی موثر پٹرولنگ یقینی بنائیں گے۔ اس ضمن میں پولیس اہلکاروں کے علاوہ افسران کی بھی ڈیوٹی لگا دی گئی ۔

دہشت گردی کا خطرہ

مزید :

علاقائی -