یو ایم ٹی، عالمی ثالثیت اور لا اینڈ آرڈر پر بین الاقوامی کانفرنس

یو ایم ٹی، عالمی ثالثیت اور لا اینڈ آرڈر پر بین الاقوامی کانفرنس

  

لاہور (ایجوکیشن رپورٹر) یونیورسٹی آف مینجمنٹ اینڈٹیکنالوجی (یو ایم ٹی) کے سکول آف لا اینڈ پالیسی اور سینٹر فار انڑنیشنل انویسٹمنٹ اینڈ کمرشل آربٹیریشن (سی آئی آئی سی اے) کے باہمی اشتراک سے لاہور کے مقامی ہوٹل میں عالمی ثالثیت اور لا اینڈ آرڈر پر بین الاقوامی کانفرنس کا انعقاد کیا گیا جس میں لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس جواد حسن ، صدرپاک چائنہ چیمبر ایس ایم نوید ، یوایم ٹی سکول آف لا اینڈ پالیسی کے ڈائریکٹر سید اعماد الدین اسد،بیرسٹر ظفر اللہ خان، امریکہ سے بین الاقوامی ثالثیت کے رکن عارف علی،ایڈووکیٹ سپریم کورٹ پاکستان منصور خان، قطر سے ڈاکٹر مناس، چائنہ سے زوآنلے لی اور برطانیہ سے ارشد غفار سمیت دیگر ماہرین قانون ، تجز یہ کار، مفکرین اور طلبہ و طالبات کی بڑی تعداد نے شرکت کی اورنئے آئڈیازپرسیرحاصل گفتگوکی۔ کانفرنس کے انعقاد پر لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس جواد حسن نے یو ایم ٹی اور سی آئی آئی سی اے کو مبارکباد پیش کی اور اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ چیف جسٹس سمیت پاکستان کی تمام عدلیہ سی پیک منصوبے کے مکمل ہو نے کی خواہش مند ہے کیونکہ اس سے ملک میں سرمایہ کاری بڑے گی۔

اور روزگار کے مواقع پیدا ہونگے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کو عالمی ثالثی اداروں میں جا کر اہم کردار ادا کرنا ہوگا۔انکا مزید کہنا تھا کہ ملک میں لا اینڈ آرڈر کی صورت حال کو بہتر کرنے کیلےئے چیف جسٹس آف پاکستان کی ہدایات پر زیر التوا کیس کو جلدی اور منصفا نہ طریقے سے نمٹا یا جا رہا ہے ۔ کانفرنس میں مختلف قانونی مضوعات پر تحقیقی مقالہ جات بھی پیش کیے گئے ۔کانفرنس کے اختتام پر مہمانوں میں سوینےئر بھی تقسیم کیے گئے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -