لینڈ ریکارڈ ،معطل سروس سنٹر انچارجوں کو الزامات ثابت نہ ہونے پر بحال کردیاگیا

لینڈ ریکارڈ ،معطل سروس سنٹر انچارجوں کو الزامات ثابت نہ ہونے پر بحال ...

  

لاہور(اپنے نمائندے سے )پنجاب لینڈ ریکارڈ اتھارٹی کی قائم مقام ڈائریکٹرجنرل عائشہ حمید نے چارج سنبھا لنے کے ساتھ ہی مختلف الزامات کے تحت معطل ہونے والے سروس سنٹر انچارجوں کو الزامات ثابت نہ ہونے پر بحال کردیا ہے، ملازمین نے بحال ہوتے ہی اراضی ریکارڈ سنٹر پر ورکنگ شروع کردی۔ روزنامہ پاکستان کو ملنے والی معلومات کے مطابق پنجاب لینڈ ریکارڈ اتھارٹی کی ڈائریکٹر جنرل نے مختلف انکوائریوں میں عرصہ دراز سے پیشیاں بھگتنے والے سروس سنٹر انچارج پر الزامات ثابت نہ ہونے پر اپنی ورکنگ جاری کرنے کی ہدایت کردی ہے ذرائع نے بتایا ہے کہ سابق ڈی جی پنجاب لینڈ ریکارڈ اتھارٹی کیپٹن ظفر اقبال نے ان کو معطل کررکھا تھا تاہم انکوائری میں بے گناہ ثابت ہونے پر موجودہ ڈی جی کے احکامات پر سروس سنٹر انچارج علی نواز گورایہ ،محمد طارق خواجہ اویس اور عبدالواصف کو بحال کر کے کام شروع کرنے کی ہدایت کی ہے۔ اسی طرح ندیم عباس کو مظفر گڑھ سے اوکاڑہ اور محمد مبشر کو اوکاڑہ سے لودھراں ٹرانسفر کردیا گیا ہے بحال ہونے والے ملازمین میں آرڈر ملتے ہی خوشی کی لہر دوڑ گئی ہے۔

مزید :

صفحہ آخر -