پنجاب ، ترقیاتی منصوبے کرپشن کی نذر، 200ارب روپے کی بے ضابطگیوں کا انکشاف

پنجاب ، ترقیاتی منصوبے کرپشن کی نذر، 200ارب روپے کی بے ضابطگیوں کا انکشاف

  

لاہور ( ارشد محمود گھمن /سپیشل رپورٹر) صو بائی دارالحکومت سمیت پنجا ب بھر میں جو لائی2013تا جون2018 کے جاری تر قیا تی منصوبے کر پشن کی نذر ہو نے اور200ارب روپے کی بے ضا بطگیوں کا انکشا ف ہوا ہے، اس ضمن میں کمیو نیکیشن ورکس ڈیپارٹمنٹ کے 10ایس ای، 25 ایکسیئن ،45ایس ڈی او،78سب انجینئر اوردرجنوں کنٹریکٹرز کی کرپشن انکوائریاں ردی کی ٹو کری کی نذر، مذکورہ افسران اورکنٹر یکٹر ز نے مبینہ ملی بھگت کر کے سڑکوں میں ناقص پتھر کے اوپر خاکہ کی بجائے ریت مکس کر کے اربوں روپے کمائے جبکہ ناقص مٹیریل کے باعث سینکڑوں سڑکیں ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہوگئیں۔ ایڈیشنل چیف سیکرٹری (سی اینڈ ڈبلیو) محمد مشتاق وفاقی دارالحکومت کی ایک اہم شخصیت کے ہاتھو ں مجبور۔تفصیلات کے مطابق حکومت پنجاب نے لاہور سمیت پنجاب بھر کے اضلاع میں لودھراں خانیوال روڈ کیلئے22ارب روپے، رایؤنڈ تا قصور روڈ 45کروڑ،چھانگا مانگا رائیونڈ روڈ 5کروڑ ، ڈسکہ تا سمبڑیال روڈز ایک ارب ،قصور کیلئے 17کروڑ، مرید کے نارووال 2ارب، گو جرانوالہ کی سڑکوں کیلئے 5کروڑ،گجرات کیلئے3کروڑ،نارووال تا پسرور 4کروڑ،سیالکوٹ تا سید پور 6کروڑ روپے کے منصو بوں کے لئے سی اینڈ ڈبلیو کو ار بوں روپے کے ٹینڈرز جاری کر کے فنڈز فراہم کئے ۔ یہ ٹینڈرز محکمہ کے افسران لاہور کے ایس ای خاور زمان،شاہد نجم ایس ای،محمد اشرف، سہیل اکرم،افتخار احمد،ممتاز احمد کلاسرا،ا شیخ اعجاز،،رانا عابد علی، راؤ خورشید عالم، محمد بخش سیال ،ارشاد اختر،طارق ملغا نی ایکسین ٹو بہ ٹیک سنگھ،ایس ڈی او بابر وغیرہ نے میرٹ سے ہٹ کر مبینہ طور پر 15فی صد کمیشن وصول کر کے اپنے من پسندکنٹریکٹرز کو جاری کئے۔ یاد رہے کہ زیر تعمیر ڈسکہ تا سمبڑ یال روڈ کے لئے جاری فنڈز ایک ارب روپے ایکسین نارتھ عمران رضازیدی، ایکسئن جمیل بسرا،مبشر باجوہ ایس ڈی او،امتیاز سب انجینئر اور کنٹر یکٹر بھلی انڈسٹریزپرا ئیو یٹ لمیٹڈاوراسد اینڈ سنز کے ساتھ مبینہ طور پر ملی بھگت کر کے نا قص مٹیریل خا کہ کی جگہ ریت کا استعمال کیا جا رہا ہے ۔ گزشتہ دنوں ہو نے والی بارشوں سے دراڑیں پڑ نے پر پانی اندر داخل ہو نے سے جگہ جگہ شگاف پڑنا شروع ہو گئے ہیں اور گاڑیوں کے پھنس جانے کی وجہ سے لو گوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے۔ مذکورہ افسران نے اربوں روپے کے منصو بوں میں ناقص مٹیریل استعمال کر کے کروڑوں کی مبینہ طور پر کرپشن کر کے آپس میں بانٹ لئے جس کا بھانڈا اوور لوڈڈ چلنے والی گاڑیوں نے پھوڑ دیا تو محکمہ کے ایس ای،ایکسین،اور ایس ڈی او صا حبان نے اپنی کرپشن کو چھپانے کے لئے ٹو ٹ پھو ٹ کا شکار ہونے والی جگہوں پرلک بنجری ڈالنا شروع کر دی ہے تا ہم سی اینڈ ڈبلیو کے افسران کا کہنا ہے کے فنڈز کی عدم فراہمی کی وجہ سے کچھ روڈز نامکمل ہیں جیسے ہی فنڈز دستیاب ہوتے ہیں کام شروع کر دیا جا تا ہے جبکہ چیف انجینئرنارتھ شفقت بٹر،ساؤتھ نیر سعیداور سرکل لاہور خالد جاوید کا کہنا ہے کہ ذمہ دار افسران کے خلاف انکوائریوں کے بعد کارروائی کی جائے گی۔

بے ضا بطگیوں کا انکشا ف

مزید :

صفحہ آخر -