مہمندا یجنسی ،تمام قبائلی مشران نے فاٹا کے انضمام کا فیصلہ مسترد کردیا

مہمندا یجنسی ،تمام قبائلی مشران نے فاٹا کے انضمام کا فیصلہ مسترد کردیا

  

مہمند ایجنسی( نمائندہ پاکستان) مہمند ایجنسی کے تمام اقوام کے مشران نے وزیر اعظم پاکستان کے صوبے کے انضمام کے بیان کو مسترد کر دیا۔ قبائلی علاقوں پر مشران کے رائے کے بغیر کسی بھی فیصلے کے خلاف بھر پور مذمت کرتے ہیں۔ دہشت گردی کے شکار قبائلی عوام کے ساتھ مزید مذاق بند کیا جائے۔ تمام فاٹا کے مشران کے ساتھ مشاورت کے بعد ایک بڑا جرگہ منعقد کرینگے۔ ان خیالات کا اظہار مہمند پریس کلب میں مہمند قبائل کے مختلف شاخوں ترگزئی، حلیمزئی، بائیزئی، خویزئی، اتمان خیل اور صافی کے عمائدین ملک فیاض خان خویزئی، ملک احمد خویزئی، صداقت خان، ملک عبداللہ خان کوڈاخیل ، ملک زیارت گل ، ملک امیر نواز خان حلیمزئی، ملک ایاز خان، ملک اعجاز ، ملک نذیر خان، ملک اجمل ، ملک محمبر ، نصرت خان، میاں گل غفار، ملک عطاء اللہ، ملک سردار خان، ملک حضرت اللہ خوگاخیل، ملک عظیم خان صافی، ملک بدری زمان اتمان خیل و دیگر مشران نے کہا کہ وزیر اعظم پاکستان نے جو انضمام کا اعلان کیا ہے ایک طرف اُس کمیٹی میں فاٹا کے نمائندگی بھی صحیح نہیں اور دوسری طرف قبائلی مشران کو اعتماد میں لئے بغیر انضمام کا فیصلہ ہر گز قبول نہیں کرینگے۔ کیونکہ وزیر اعظم نے مخصوص سیاسی نمائندوں کے اجازت پر انضمام کیا۔ حالانکہ اکثیرت ہر گز انضمام نہیں چاہتے۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے پہلے بھی قربانیاں دی ہیں اور آئندہ بھی دیتے رہیں گے۔ مگر حکومت ہمارے ساتھ مذاق بند کریں۔ اور ہماری شناخت ختم کرنے سے گریز کریں۔ ہم آئندہ جمعرات کو تحصیل حلیمزئی کے مقام غیبہ خوڑ میں ایک بڑا قومی جرگہ منعقد کریں گے۔ جس میں ایجنسی بھر کے تمام مشران سینکڑوں کی تعداد میں شرکت کرینگے۔ ہمیں اعتماد میں لئے بغیر کسی بھی فیصلے کو تسلیم نہیں کرینگے۔ وزیر اعظم پاکستان اپنی بیان پر نظر ثانی کر کے قبائل کو آپس میں لڑنے سے گریز کریں۔

مزید :

کراچی صفحہ آخر -