17کروڑ روپے کی لاگت سے ’’ثقافت زندہ امین ‘‘منصوبہ شروع

17کروڑ روپے کی لاگت سے ’’ثقافت زندہ امین ‘‘منصوبہ شروع

  

پشاور( سٹاف رپورٹر)خیبر پختونخوا کے وزیر آبپاشی و کھیل محمود خان نے کہا ہے کہ صوبائی حکومت نے فنکاروں ادیبوں اور شعراء کی فلاح و بہبود کے لئے تمام ممکن اقدامات اٹھائیں ہیں اور اس مقصد کے لئے 17 کروڑ روپے کا ایک منصوبہ "ثقافت زندہ امین" کے نام سے شروع کیا ہے جسکے تحت ایک حقدار فنکار ، ادیب اور شاعر کو ماہانہ 30 ہزار روپے کا اعزازیہ دیا جا رہاہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے پیر کے روز پشاور میں ثقافت زندہ امین پراجیکٹ کے تحت فنکاروں، ادیبوں اور شعراء میں چیک تقسیم کرنے کے موقع پر منعقدہ تقریب سے بحیثیت مہمان خصوصی خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر سیکرٹری سپورٹس اور ڈائریکٹر کلچر اجمل خان بھی موجود تھے۔صوبائی وزیر نے کہا کہ صوبائی حکومت نے مقامی کلچر کے فروغ اور ترویج کے لئے ایک جامع ثقافتی پالیسی بھی تشکیل دی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت فنکاروں ، ادیبوں اور شعراء کو صحت انصاف کارڈ کی سہولیات بھی فراہم کر رہی ہے ۔ محمود خان نے کہا کہ ثقافت زندہ امین پراجیکٹ فنکاروں، ادیبوں اور شعراء کے لئے پاکستان تحریک انصاف حکومت کی جانب سے ایک تحفہ ہے۔ انہوں نے نہایت افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ماضی میں حکمرانوں نے ثقافت کے فروغ اور ترقی کے لئے کوئی عملی اقدامات نہیں اٹھائے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ثقافت زندہ امین کے پروگرام کے تحت شفاف طریقے سے حقدار فنکاروں ، ادیبوں اور شعرا میں اغزازیہ تقسیم کرنے کے لئے فنکاروں پر مشتمل ایک کمیٹی بھی تشکیل دی ہے تا کہ کسی کی حق تلفی نہ ہو ۔قبل ازیں صوبائی وزیر محمود خان نے فنکاروں ، ادیبوں اور شعراء میں چیک بھی تقسیم کئے۔

مزید :

کراچی صفحہ آخر -