ن لیگ سے پی ٹی آئی میں شامل شہریار ریاض کا این اے 62، پی پی 18سے الیکشن لڑنیکا امکان

ن لیگ سے پی ٹی آئی میں شامل شہریار ریاض کا این اے 62، پی پی 18سے الیکشن لڑنیکا ...

  

راولپنڈی(سید گلزار ساقی سے) مسلم لیگ(ن) چھوڑ کر تحریک انصاف میں شامل ہونے والے سابق ایم پی اے شہریار ریاض قومی و صوبائی اسمبلی سے انتخابات میں حصہ لینے پر ووٹرز ،سپورٹرز مجبور کرنے لگے شہریار ریاض نے حلقے این اے 62اور پی پی 18سے پی ٹی آئی کے امیدوار ہو سکتے ہیں۔شیخ رشید کیلئے شہریار ریاض مد گار ثابت ہو سکتے ہیں، ذرائع کے مطابق مسلم لیگ(ن) کے سابق ایم پی اے شہریار ریاض جو کہ مسلم لیگ (ن) کی ایک مضبوط وکٹ تھی لیکن پارٹی سے اختلافات کی بناء پر کچھ عرصہ خاموش ہو گئے تھے اور ن لیگ کی طرف سے بھی اُن کو نظر انداز کئے جانے پیش نظر راولپنڈی اسلام آباد سے تعلق رکھنے والے تحریک انصاف کی اہم شخصیت نے شہریار ریاض کی مد میں مسلم لیگ(ن) کی وکٹ گرانے میں اہم کردار ادا کیا ہے جس پر شہریار ریاض کی ملاقات عمران خان سے کروائی گئی ہے، ادھر شہریار ریاض کے پی ٹی آئی میں شامل ہونے کے بعد اُن کے سابقہ انتخابی حلقے پی پی12اور اُن کے ذاتی ووٹرز اور اُن کے والد بوبو ریاض کے دھڑوں نے شہریار ریاض سے ملاقاتیں کرتے ہوئے اُن کو تحریک انصاف کے ٹکٹ سے قومی اسمبلی کے حلقہ این اے62 اور پی پی 18سے انتخابات میں بھر پور حصہ لینے پر زور دیا ہے۔ ادھر ذرائع کا کہنا ہے کہ چونکہ قومی اسمبلی راولپنڈی شہر کے دونوں قومی اسمبلی کے حلقوں کے شیخ رشید کے تحریک انصاف کے ساتھ اتحاد ہے جس وجہ سے صوبائی اسمبلی کے حلقوں پر تحریک انصاف کے اُمیدوار ہوں لہذا اس صورت حال میں شہریار ریاض تحریک انصاف اور شیخ رشید کے اتحادی کے طور پر پی پی18کے مضبوط متوقع امیدوار ہیں تاہم شہریار ریاض نے پارٹی قیادت کے فیصلوں کو بھی مد نظر رکھنا ہے۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -