ڈی ایچ اے کالج کی طالبہ کیلئے ینگ ایمرجنگ لیڈر شپ ایوارڈ

ڈی ایچ اے کالج کی طالبہ کیلئے ینگ ایمرجنگ لیڈر شپ ایوارڈ

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر) واشنگٹن ڈی سی میں امریکہ کے اسٹیٹ ڈپارٹمنٹ میں ہونے والی ایک پر وقار تقریب میں ڈی ایچ اے ڈگری کا لج برائے خواتین کی ایک ہونہار طالبہ دانیا حسن کو ینگ ایمرجنگ لیڈر شپ ایوارڈ سے نوازا گیا ۔ 18سالہ دانیا حسن ڈی ایچ اے کالج فار ویمن (ڈی سی ڈبلیو) میں سیکنڈ ائیر(پری میڈیکل ) کی ایک ذہین طالبہ ہیں جو اپنی تعلیمی سرگرمیوں کے ساتھ ساتھ کچھ وقت نکال کر رضا کار انہ طور پر ایک گروپ کے ساتھ ملکر عروس البلاد کراچی میں پسماندہ علاقوں میں واقع اسکولوں کے غریب طلباء کی تعلیمی ' مالی اور اخلاقی امداد کے لئے بڑھ چڑھ کر حصہ لیتی ہیں تاکہ طلباء اپنیتعلیمی سرگرمیاں بغیر کسی رکاوٹ اور دشواری کے جاری رکھ سکیں ۔ انکی ان شاندار ولولہ انگیز خدمات کے اعتراف میں حکومت امریکہ نے انہیں اس قابل فخر اعزاز کے لئے چُنا۔ انہیں پاکستان کی جانب سے واحد طالبہ اور پوری دنیا سے منتخب ہونے والی مختلف ممالک کی چند مخصوص طالبات میں شامل ہونے کا اعزازبھی حاصل رہا۔ اس سے پہلے وہ امریکہ میں سمر ایکسچینج پروگرام کے تحت ینگ لیڈر شپ کورس میں شامل ہو چکی ہیں اور امریکہ کے جان ہوپکنگ ہوسپٹل میں فیلو شپ پروگرام کا کورس بھی کر چکی ہیں۔ایڈ منسٹریٹر ڈی ایچ اے بریگیڈئیر شاہد حسن علی نے دانیا حسن کی شاندار کارکردگی پرا نہیں مبارکباد دی اور اس ہونہار طالبہ کو پاکستان کا ابھرتا ہوا روشن ستارہ قرار دیا ۔ انہوں نے ڈی سی ڈبلیو کی پرنسپل ڈاکٹر فرحت آغا اور فیکلٹی اسٹاف کے ممبران کی شاندار کارکردگی کو بھی بے حد سراہاجنہوں نے اپنی محنت' لگن اور جذبے سے کالج کے اعلیٰ تعلیمی اور تربیتی میعار کو برقرار رکھا ہوا ہے جس سے ڈی ایچ اے کالج فار ویمن کا شمار شہر کے معروف ترین خواتین کے کالج میں ہوتا ہے۔ دانیا حسن کو دیا جانے والا یہ اہم اعزاز ڈی سی ڈبلیو اورڈی ایچ اے کے لئے قابل فخر اور قابل عزت و تکریم ہے۔ یہ اعزاز ڈی ایچ اے کالج میں پائے جانے والے اس متحرک اور بھرپور تعلیمی ماحول کاغماز ہے جو باصلاحیت 'پُر اعتماد ' روشن خیال اور فعال شخصیت کی حامل خاتون طالبات پیدا کرنے کا باعث بنتا ہے۔ کالج کی فارغ التحصیل یہ خواتین معاشرے کی فلاح وبہبود میں ایک اہم اور قابل فخرکردار ادا کرتی ہیں۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -