خریداری بحران سے تنگ کاشتکاروں کا آئندہ سال کم رقبہ پر گندم کاشت کرنیکا فیصلہ

خریداری بحران سے تنگ کاشتکاروں کا آئندہ سال کم رقبہ پر گندم کاشت کرنیکا فیصلہ

  

ملتان (سپیشل رپورٹر ) جنوبی پنجاب میں گندم خریداری بحران سے تنگ آکر گندم کے ترقی پسندکاشتکاروں کسانوں نے آئندہ سال کم رقبہ پر گندم کاشت کرنے کافیصلہ کیا ہے گندم کی خریداری بحران سے کسانوں کی پیداواری لاگت تک پوری نہیں ہوپارہی ہے فی ایکڑ اوسط پیدا وار35سے 40من آرہی ہے جس سے پیداواری لاگت پوری کرنا بھی مشگل ہوگیا ہے فی ایکڑ3سے 4ہزار روپے کاخسارہ برداشت کرنا پڑرہا ہے حکومت کی جانب سے مقررکردہ گندم کی امدادی قیمت 13سوروپے فی من کی بجائے کسانوں کو صرف 11سوروپے سے ساڑھے گیارہ سوروپے فی من مل رہے ہیں جس سے پیداواری لاگت پورا ہونا بہت مشکل ہوگیا ہے زمین کی تیاری سے لیکرفصل کی برداشت تک قریباً35سے 40ہزارروپے فی ایکڑ اخراجات برداشت کئے گئے ہیں جبکہ آمد ن صرف 38سے 40ہزارروپے فی ایکڑ آرہی ہے جس سے 6ماہ کی مزدوری کانقصان ہورہا ہے جوکہ فی ایکڑ5ے 8ہزار روپے بنتی ہے ۔

کم رقبہ گندم کاشت

مزید :

کراچی صفحہ اول -