پیپلز پارٹی سب سے زیادہ مصائب و مشکلات برادشت کرنے والی پارٹی ہے

پیپلز پارٹی سب سے زیادہ مصائب و مشکلات برادشت کرنے والی پارٹی ہے
پیپلز پارٹی سب سے زیادہ مصائب و مشکلات برادشت کرنے والی پارٹی ہے

  

دبئی (طاہر منیر طاہر)  2018ء میں ہونے والے ممکنہ انتخابات پاکستان پیپلز پارٹی کے لیے حیران کن نتائج لے کر سامنے آئیں گے ، کچھ لوگوں کا خیال ہے کہ پیپلز پارٹی کی مقبولیت میں کمی ہوئی ہے اور ووٹ بنک کا گراف نیچے گر چکا ہے لیکن ایسی کوئی بات نہیں ہے ۔ پیپلز پارٹی آج بھی اپنی پوری آن بان اور شان و شوکت کے ساتھ سیاست کے میدان میں کھڑی ہے اور ہر ایک سے مقابلہ کے لیے تیار ہے ۔

یوٹیوب چینل سبسکرائب کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

ان خیالات کا اظہار پاکستان پیپلز پارٹی دبئی کے زیرِ اہتمام ہونے والے ایک اور اجلاس میں کیا گیا جس میں میاں منیر ہانس ، ملک خادم شاہین ، ذوالفقار علی مغل ، شفیق صدیقی ، اسلم ملک، مظفر باجوہ ، نثار خٹک ، میاں شوکت علی ، رضوان عبداللہ ، فضل درانی ، شفیق گوگا، عرفان جمانی ، وقاص گورسی ، ذوالقرنین علی ، شہزارد چودھری ، عمردراز ، قاسم بلوچ ، علی گوہر شاہانی اور چودھری راشد علی بریار نے شرکت کی ۔ تقریب کا اہتمام شفیق صدیقی اور فضل گجر نے کیا تھا جس میں مسقط سے امام بخش اور پاکستان سے گوہر سرفراز قریشی مہمانان خصوصی تھے۔

اس موقعے پر مقررین نے کہا کہ پیپلز پارٹی وہ واحد سیاسی جماعت ہے جس نے سب سے زیادہ مشکلات کا سامنا کیا ہے اور ہر طرح کے حالات کا ڈٹ کر مقابلہ کیا ہے یہی وجہ ہے کوئی آدمی آج تک پیپلز پارٹی کو نہ تو ختم کر سکا ہے اور نہ ہی اس کے کارکنوں کو توڑ سکا ہے ۔ مقررین نے کہا کہ پیپلز پارٹی کے جیالے کارکن اپنی پارٹی اور لیڈران کی ہر بات پر لبیک کہتے ہیں اور تن من دھن سے اس کے ساتھ ہیں ۔ حالات اور وقت کے ساتھ ساتھ پیپلز پارٹی میں اُتار چڑھاﺅ ضرور آئے ہیں لیکن پیپلز پارٹی آج بھی عظیم چٹان کی طرح مضبوط اور ناقابل تسخیر ہے ۔

پی پی پی کے ورکر پورے پاکستان میں موجود ہے جس کی ہمدردیاں کل بھ پی پی پی کے ساتھ تھیں آج بھی ہیں اور آنے والے وقت میں بھی رہیں گی ۔ پیپلز پارٹی کی عوامی رابطہ مہم پاکستان اور بیرون ملک زبردست طریقے سے جا رہی ۔ پاکستان پیپلز پارٹی کی اوورسیز تنظیم نو کے بارے میں کہا گیا کے دنیا کے بہت سے ممالک میں پی پی پی کی تنظیم تو کر دی گئی ہے جبکے متحدہ عرب امارات اور گلف کے دیگر ممالک کے لیے بھی نئی تنظیموں کا اعلان جلد کر دیا جائے ۔ تنظیمیں انتخابات سے قبل انتخابات کی تیاری میں اپنا بھر پور کردار ادا کریں گی۔ اس موقع پر PPP کے کارکنوں نے آصف علی زرداری ، بلاول بھٹو اور دیگر اعلیٰ قیادت پر مکمل اعتماد کا اظہار کیا۔

مزید :

عرب دنیا -