آپ پر جادو ہوسکتا ہے یا نہیں ؟ دست شناس کی ایسی تحقیق جو جادو اور نفسیاتی مسائل کا فرق بیان کردیتی ہے

آپ پر جادو ہوسکتا ہے یا نہیں ؟ دست شناس کی ایسی تحقیق جو جادو اور نفسیاتی ...
آپ پر جادو ہوسکتا ہے یا نہیں ؟ دست شناس کی ایسی تحقیق جو جادو اور نفسیاتی مسائل کا فرق بیان کردیتی ہے

  

لاہور(نظام الدولہ )سیانے کہتے ہیں کہ اچھا مشورہ دشمن بھی دے تو اسے سن لینا چاہئے ۔اور اگر اس مشورے سے آپ کو فائدہ ہورہا ہو تو اس پر کان دھرنے میں کوئی مضائقہ نہیں۔ایک روز میرے دوست کا فون آیا ،پریشان تھا کہ اس کی سالی کی طبیعت یکایک خراب ہوگئی ہے ۔اس پر جنّ آگیا ہے اور لگتا ہے اس پر کسی نے کالا جادو کرادیا ہے ۔مجھ سے کسی پیر کامل کا پتہ پوچھنے لگا ۔میں نے اس سے پوچھا کہ انہیں کیسے یقین ہے کہ واقعی اسکی سالی پر جن یا جادو کا اثر ہوگیا ہے ۔ اس نے جو باتیں بتائیں انکی رو سے تو لگتا تھا کہ اس نازک سی خاتون میں پہلوانوں جیسی طاقت آگئی ہے ،آواز بدل گئی ہے تو واقعی یہ کام کسی مافوق الفطرت قوم کا ہوگا ۔میں نے ازراہ احتیاط اس سے کہا کہ اگر وہ مجھے سالی صاحبہ کا ہاتھ دیکھا دے تو ممکن ہے اس کے مرض کی تشخیص کرنے میں آسانی ہوجائے اور خواری سے بچا جاسکے ۔اگر اس کے لئے کسی پیر کی ضرورت ہوگی تو پیر صاحب ورنہ اسکا علاج کسی ڈاکٹر سے کرایا جاسکتا ہے۔وہ مان گیا اور شام کے وقت جب وہ میرے پاس آئے تو اس کی سالی ہمراہ تھی۔خوش شکل ،لمبا قد ،تعلیم یافتہ ،ایم اے اکنامکس کیا تھا ۔اس کے ہاتھوں کے پرنٹ لئے اور کافی غوروخوض کے بعد ان کو بتایا کہ مجھے یقین ہے یہ کسی جن یا جادو کاپیدا کردہ فتنہ نہیں ۔اچھی بات یہ تھی کہ دوست کی سالی خود اس مسئلہ سے نجات چاہتی تھی اور ہر بات سننے کو تیار تھی ۔میں نے اس کے ہاتھ کی لکیروں اور پوائنٹس پر نشان لگائے اور بتایا کہ یہ سب نشانیاں شیزوفرینیا کے خطرناک حد تک بڑھنے کی علامتیں ہیں ۔یہ مرض کسی جناتی مرض سے کم نہیں کیونکہ اس میں انسان کی سوچیں اور توانائی یکایک غیر معمولی طور پر دوسروں کو حیران کرنے کا باعث بن جاتی ہے ۔سمجھدار لوگ تھے اس سمجھ گئے ۔میں نے ایک اچھے سائیکیٹرسٹ کے پاس تو بھیجا لیکن ساتھ مشورہ بھی دیا کہ وہ یوگا بھی کریں اور ساتھ اللہ کے کلام سے بھی مدد حاصل کریں ۔البتہ جنات جادو کا دماغ سے خیال نکال دیں ۔چند ماہ بعد وہ لڑکی اس مرض کی شدت سے باہر نکل آئی اور پہلے سے زیادہ بہتر معمول کے مطابق زندگی گزارنے لگی ۔

اس واقعہ کو بیان کرنے کا مقصد یہ ہے کہ آپ کو یہ بات سمجھائی جاسکے کہ جنات یا جادو اگرچہ اپنا وجود رکھتے ہیں لیکن اللہ کی بنائی اعلٰی ترین مخلوق انسان پر اسقدر بھی وہ حاوی نہیں۔انسان کے اندر خود اتنی زیادہ قوتیں موجود ہیں جو خوابیدہ رہتی ہیں لیکن جب دماغ کا سرکٹ منتشر ہوتا ہے تو ان میں بیداری پیدا ہوتی ہے ۔اور اچھا بھلا انسان خود کو غیر معمولی سمجھنے لگتا ہے ۔قدرت اسکا عکس ہاتھوں میں دے دیتی ہے ۔دماغ میں خوابیدہ صلاحیتوں اور عملی قوتوں کے نقش ہاتھوں میں ابھر آتے ہیں ۔لہذا جب کوئی انسا ن کسی دماغی خلل میں مبتلا ہوتا ہے یا کوئی ایسا انسان جس کی دماغی صحت پر شک کیا جاتا ہو اسکے ہاتھ میں ایسی لکیریں اور نشان موجود ہوتے ہیں جو اس کی غیر معمولی اور غیر حقیقی باتوں کی نشاندہی کرتی ہیں۔ہاتھوں میں ذہنی جسمانی روحانی نفسانی بیماریوں اور خوبیوں کی لکیریں موجود ہوتی ہیں۔جیسا کہ مذکورہ بالا واقعہ سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ جب کوئی انسان خلاف فطرت اور مجہولانہ حرکتیں کرنے لگ جائے تو لازم نہیں اس پر جنات و جادو کام کرگیا ہے ۔اس بات کا امکان موجود ہے کہ اس کے ہاتھ میں نفسیاتی بیماری کی علامتیں موجود ہوں مگر باقی لوگ اسکو سحرزدہ مریض بنانے پر تلے بیٹھے ہوں اور پھراسکے علاج میں غفلت برت کر اسکو ہلاکت میں ڈال دیاجاتا ہے ۔

عام طور پر شیزوفرینیا ایسے لوگوں کے ہاتھ میں جزیرے بنے ہوتے ہیں،خاص طور پر دماغ کی لکیر پر ۔۔انگوٹھے کی جڑ میں بنا ہوا جزیرہ بھی ایسے کمزور اعصابی نظام کی نشاندہی کرتا ہے ۔جن لوگوں کے انگوٹھے کے نیچے ایسا جزیرہ ہوانکی اعصابی تکلیف انہیں جناتی مرض کا اشارہ دیتی ہے ۔تیسری انگلی کے نیچے جزیرہ کا نشان بھی ظاہر کرتا ہے کہ ایسا انسان دماغی چوٹ لگنے سے بسا اوقات اپنا کنٹرول کھودیتا ہے ۔قمر کے ابھار پر کراس کا نشان بھی ایسے فرد کی نشاندھی کرتا ہے جو عام طور کہتا ہے کہ اسے پراسرار آوازیں سنائی دیتی ہیں ،وہ تخیلاتی طور پر ایسی باتیں کرجاتا ہے کہ لوگ اسکی ذہنی حالت پر شک کرتے ہیں ۔اسکے علاوہ بھی ہاتھوں میں ایسی کئی طرح کی علامات ہوتی ہیں جو نفسیاتی بیماریوں یا الجھنوں کی نشاندہی کرتی ہیں اور ایسے ہاتھ والوں پر جن یا جادو نہیں بلکہ خود ان کے اندر سے نکلنے والی قوتوں کا اثرہورہا ہوتا ہے،یہ ان سے خلاف فطرت کام کراتی ہیں تو سمجھ لیا جاتا ہے کہ ان پر سحر ہوگیا ہے ۔

جہاں تک جادو یا جنات کے زیر اثر آنے کا تعلق و معاملہ ہے تو عام طور پر ایسے ہاتھ بالکل نارمل ہوتے ہیں ۔اسکے باوجود جب ان سے کوئی خلاف فطرت امور سرزد ہوں تو تب روحانی علاج کرانا چاہئے ۔

مزید :

لائف سٹائل -مخفی علوم -