مجرموں نے جیل سے بچنے کا انوکھا طریقہ ڈھونڈ لیا، بچوں سے جرائم کروانا شروع کردئیے، اس سے جیل سے کیسے بچا جاسکتاہے؟ حیران کن طریقہ جانئے

مجرموں نے جیل سے بچنے کا انوکھا طریقہ ڈھونڈ لیا، بچوں سے جرائم کروانا شروع ...
مجرموں نے جیل سے بچنے کا انوکھا طریقہ ڈھونڈ لیا، بچوں سے جرائم کروانا شروع کردئیے، اس سے جیل سے کیسے بچا جاسکتاہے؟ حیران کن طریقہ جانئے

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک)جرائم پیشہ گروہ کسی بھی معاشرے کا ناسور ہوتے ہیں جو عوام کی زندگیاں اجیرن بنائے رکھتے ہیں اور قانون سے بچنے کے لیے کئی طرح کے حربے استعمال کرتے ہیں۔ اب ان گروہوں نے اس مقصد کے لیے ایک ایسا ہولناک حربہ استعمال کرنا شروع کر دیا ہے کہ سن کر ہی آدمی کانپ جائے۔ میل آن لائن کے مطابق برطانوی ماہرین نے انکشاف کیا ہے کہ جرائم پیشہ گینگز نے قانون سے بچنے کے لیے بڑے پیمانے پر بچوں کو بھرتی کرنا شروع کر رکھا ہے جس سے ملک بھر میں بچوں کے سنگین نوعیت کے جرائم میں ملوث ہونے کی شرح میں ہوشربا اضافہ ہو رہا ہے۔

یوٹیوب چینل سبسکرائب کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

اعدادوشمار کے مطابق 2016ءمیں 1891بچوں نے جرم کا ارتکاب کیا تھا۔ اس شرح میں صرف ایک سال کے دوران 38فیصد اضافہ ہو گیا ہے اور 2017ءمیں ایسے بچوں کی تعداد 2ہزار 604تک پہنچ گئی ہے۔ بچوں کے تحفظ کے لیے کام کرنے والی کارکن تھریسا کیو کا کہنا تھا کہ ” ان بچوں کی عمریں 10سال سے بھی کم ہوتی ہیں اور جرائم پیشہ گروہ انہیں اس لیے بھرتی کررہے ہیں کیونکہ ان پر مقدمہ نہیں چلایا جا سکتا۔ یہ بچے لوگوں پر چاقو سے حملے کرتے ہیں اور گینگز کے لیے دیگر سنگین نوعیت کے جرائم کا ارتکاب کرتے ہیں، جن میں ڈکیتی، منشیات کی سمگلنگ اور لوگوں کو قتل کی دھمکیاں دینا وغیرہ شامل ہیں۔ساﺅتھ یارک شائر اور کینٹ سمیت برطانیہ کے بعض علاقے ایسے ہیں جہاں بچوں کے جرائم کی شرح میں ایک سال کے دوران 100فیصد تک اضافہ ہوا ہے اور یہ صورتحال انتہائی پریشان کن ہے۔“

مزید :

ڈیلی بائیٹس -برطانیہ -