یہ ماں کیا صاف کررہی ہے؟ حقیقت جان کر آپ کا بھی دل ٹوٹ جائے گا

یہ ماں کیا صاف کررہی ہے؟ حقیقت جان کر آپ کا بھی دل ٹوٹ جائے گا
یہ ماں کیا صاف کررہی ہے؟ حقیقت جان کر آپ کا بھی دل ٹوٹ جائے گا

  

لندن(نیوز ڈیسک) کسی ماں کے لئے اس سے بڑھ کر دردناک بات کیا ہو سکتی ہے کہ وہ بے گناہ قتل کئے گئے اپنے جوان بیٹے کے خون سے سرخ ہونے والی زمین کو اپنے ہاتھوں سے صاف کرے۔یہ المناک منظر گزشتہ روز جنوبی لندن کے علاقے ساﺅتھ وارک میں اس وقت دیکھا گیا جب 38 سالہ خاتون پریتانہ مورگن نے اپنے 17 سالہ مقتول بیٹے رحیم اینسورتھ بارٹن کا فٹ پاتھ پر جما ہوا خون خود جا کر صاف کیا۔ رحیم کو دو روز قبل ایک گاڑی میں سوار نامعلوم افراد نے گولیاں مار کر قتل کردیا تھا۔

اخبار ’دی میٹرو‘ کے مطابق پریتانہ اپنی ایک رشتہ دار خاتون کے ساتھ اس جگہ پہنچیں جہاں ان کے بیٹے کو قتل کیا گیا تھا اور اپنے ہاتھوں سے اپنے بیٹے کے خون کو صاف کیا۔ نوجوان کے قتل کے دو دن بعد بھی اس کا خون وہاں سے صاف نہیں کیا گیا تھا۔ غمزدہ ماں نے اس موقع پر اپنے بیٹے کے متعلق بات کرتے ہوئے کہا ”وہ بہت نیک دل تھا اور لوگوں کی مدد کرکے خوش ہوتا تھا۔ بس اب اس ظلم کو رکنا چاہئیے۔ یہ کسی ایک نسل، کسی ایک قوم یا کسی ایک کلچر کی بات نہیں ہے۔ یہ سب انسانوں کی نسل کی بات ہے۔ ہم ایک نسل انسانی ہیں۔ میں نوجوانوں سے اپیل کرتی ہوں کہ میرا بیٹا قتل ہوگیا لیکن اب کسی اور کو قتل نہ کریں۔“

واضح رہے کہ برطانیہ کے مختلف علاقوں میں گزشتہ چند دنوں کے دوران درجنوں نوعمر افراد کو قتل کیا جا چکا ہے۔ خیال ظاہر کیا جاتا ہے کہ ان واقعات کے پیچھے نسلی منافرت پھیلانے والوں کا ہاتھ ہے جو مختلف رنگ اور نسل سے تعلق رکھنے والے نوجوانوں کو ایک دوسرے کا قاتل دکھا کر تشدد اور بے امنی کو ہوا دینے کے لئے سرگرم ہیں۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -برطانیہ -