شادی سے 5 دن پہلے دلہن کے ساتھ ایسا واقعہ پیش آگیا کہ ہمیشہ کے لئے معذور ہوگئی، لیکن دولہے نے بہادری دکھاتے ہوئے زندگی بچالی، ایسا کیا واقعہ پیش آیا تھا؟ جانئے

شادی سے 5 دن پہلے دلہن کے ساتھ ایسا واقعہ پیش آگیا کہ ہمیشہ کے لئے معذور ...
شادی سے 5 دن پہلے دلہن کے ساتھ ایسا واقعہ پیش آگیا کہ ہمیشہ کے لئے معذور ہوگئی، لیکن دولہے نے بہادری دکھاتے ہوئے زندگی بچالی، ایسا کیا واقعہ پیش آیا تھا؟ جانئے

  

ہرارے(نیوز ڈیسک) کبھی کبھار ایسا بھی ہوتا ہے کہ انسان اپنی خوشیوں میں گم ہوتا ہے مگر بدقسمتی اس کا تعاقب کر رہی ہوتی ہے اور اس کی خوشیوں میں لہو کا رنگ گھولنے کے لئے موقع تلاش کر رہی ہوتی ہے۔ زمبابوے سے تعلق رکھنے والے ایک نوجوان جوڑے کے ساتھ پیش آنے والا سانحہ ایک ایسی ہی دردناک مثال ہے جنہیں شادی سے محض پانچ دن قبل ایک ایسی آزمائش سے گزرنا پڑ گیا کہ جس کا تصور کر کے ہی انسان کی آنکھیں نم ہو جائیں۔

حیمی فاکس اور ان کی منگیتر زانیلے ندلوووو افریقہ کے سب سے بڑے دریا زامبیزی میں کشتی رانی سے لطف اندوز ہو رہے تھے کہ جب اچانک ایک مگر مچھ پانی کی سطح سے ابھرا اور زانیلے کو بازو سے دبوچ کر دریا میں کھینچ لیا۔ یہ انتہائی خوفناک حملہ تھا لیکن حیمی نے ناقابل یقین بہادری کا مظاہرہ کرتے ہوئے دریا میں چھلانگ لگا دی اور اپنی منگیتر کو مگر مچھ کے جبڑے سے کھینچنا شروع کر دیا۔ وہ کمال ہمت کا مظاہرہ کرتے ہوئے زانیلے کو کھینچ کر دوبارہ کشتی پر لے آئے لیکن اس دوران سفاک مگرمچھ بہت بڑ انقصان کر گیا تھا۔ اس نے زانیلے کا بازو کاٹ کھایا تھا اور اب حیمی کے لئے سب سے بڑا امتحان اپنی منگیتر کی جان بچانا تھا۔ انہوں نے ایک بار پھر ہمت سے کام لیا اور زانیلے کو دریا کے کنارے تک پہنچایا جہاں سے انہیں فوری طور پر ہسپتال لے جایا گیا۔

بلاوایہ کے میٹر ڈی ہسپتال میں ڈاکٹروں کا کہنا تھا کہ زانیلے کا بہت زیادہ خون بہہ چکا تھا اور اگر انہیں ہسپتال لانے میں مزید کچھ دیر ہو جاتی تو وہ زندہ نا بچ پاتیں۔ اگرچہ وہ ایک بازو سے محروم ہو چکی ہیں لیکن حیمی نے انہیں خوشیاں دینے کے لئے اپنی ہر ممکن کوشش کرنے کا تہیہ کر رکھا تھا۔ انہوں نے پانچ دن بعد طے شدہ تاریخ پر ہسپتال میں ہی زانیلے کے ساتھ شادی کی اور اس موقع پر قریبی دوستوں اور ہسپتال کے عملے نے بھی اس جوڑے کی خوشیوں کے لئے نمناک آنکھوں کے ساتھ دعا کی۔حیمی، جو کہ برطانوی شہری ہیں، کا کہنا ہے کہ وہ زانیلے کے صحتمند ہونے پر ہنی مون کے لئے روانہ ہوں گے اور پھر مستقل طور پر برطانیہ میں ہی جا بسیں گے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -بین الاقوامی -