علی پور ‘ ڈرگ انسپکٹر لوٹ مار کا چیمپئین ‘ ڈسٹری بیوٹرز سے بڑی ڈیل کا انکشاف

  علی پور ‘ ڈرگ انسپکٹر لوٹ مار کا چیمپئین ‘ ڈسٹری بیوٹرز سے بڑی ڈیل کا ...

علی پور(نمائندہ پاکستان)ڈرگ انسپکٹر علی پور طارق مسعود فاروقی کی لوٹ مار کے سنسنی خیز انکشافات سامنے آگئے،علی پور میں 35تا 40میڈیسن کمپنیوں کے سات ڈسٹری بیوٹرمقررجن سے لاکھوں کی ادویات اٹھانے کے کے بعد ڈیل ہوئی،حکومت نے گزشتہ روز میڈیسن کی قیمت میں (بقیہ نمبر14صفحہ12پر )

اضافہ کرنے پر ادویہ ساز کمپنیوں کے خلاف سخت ایکشن لیتے ہوئے ملک بھر کے ڈرگ انسپکٹروں کو زائدالقیمت ادویات اٹھانے اوران کے خلاف سخت کاروائی کا حکم دیا تھا۔جس کافائدہ اٹھاتے ہوئے ڈسٹری بیوٹروں کے گوداموں پرچھاپہ مار کرکروڑ وں کی ادویات ضبط کرلیں تھیں۔ سرل فارما سیوٹیکل کمپنی نے ڈسٹری بیوٹر سے تقریباً تین سے چار لاکھ کی ادویات اٹھالیں ۔سل کیئر کمپنی کے پاس زیادہ ترشوگر،بلڈ پریشر کی ادویات ہوتی ہیں اسی طرح زین ڈسٹری بیوٹرز جس کے پاس سامی فارما سیوٹیکل کی ادویات ہوتی ہیں اس سے بھاری قیمت کی زائدالقیمت ادویات اٹھالیں اسی طرح علی فارما ڈسٹری بیوٹر جس کے پاس زیادہ چلنے والی کمپنیوں کی ادویات ہوتی ہیں وہاں سے تقریباً5تا6لاکھ کی ادویات سیمپل اٹھالیں ۔اسی طرح عثمان فارما سیوٹیکل جس کے پاس ملٹی نیشنل کمپنیوں کی ادویات ہوتی ہیں وہاں سے تقریباً تین سے چار لاکھ کی ادویات اٹھالیں اسی طرح زیڈ اے فارما ڈسٹری بیوٹر وہاں سے لاکھوں کی ادویات اٹھالیں اسی طرح انڈس فارما سیوٹیکل سے زائد القیمت ادویات جن میں سیرپ اورانجکشن شامل ہیں وہاں سے تقریباً4تا5لاکھ کی ادویات اٹھالیں۔اسی طرح المدینہ ڈسٹری بیوٹرز جن کے پاس زیادہ ت رادویات سرجری کیلئے ہوتی ہیں وہاں سے بھاری مقدارمیں سیمپل اورادویات اٹھالیں اوربعدازاں اپنے کارندے حامد رضا کے گھر جاکر فیک کاروائی کرکے حکومت کی آنکھوں میں دھول جھونکی گئی اورحامد رضا کے توسط سے ان تمام ڈسٹری بیوٹروں کو ادویات واپس کرکے بھاری مال پانی حاصل کرلیا گیا اورتمام کاروائی کھوکھاتے ڈال دی گئی اورڈسٹری بیو ٹروں کے ساتھ ملی بھگت کرکے یہ زائدالقیمت ادویات فوری طورپر تحصیل علی پور کے میڈیکل سٹوروں پر جبری فروخت کرواکروہاں سے بھی بھاری منافع حاصل کرلیا گیا۔یہ امرقابل غورہے کہ ڈرگ انسپکٹر طارق مسعود فاروقی نے اپنا کوئی آفس نہیں بنایا ۔طارق مسعود فار وقی کا دفتر اوررہائش حامد رضا کے گھر ہے جہاں پر تمام کاروائی اورڈیل پر ہوتاہے میڈیکل سٹوروں سے یاڈسٹری بیوٹروں سے اٹھائی جانے والی ادویات سیمپل بھی حامد رضا کے گھر رکھ دیئے جاتے ہیں ۔اسی طرح طارق مسعود دیگر تمام کاروائیاں کھانا پینا بھی حامد رضا کے گھر میں کرتاہے۔ اگر کسی اتائی ڈاکٹر کی بخشش کرانی ہوتو وہ بھی تمام اختیارات حامد رضا کے پاس ہوتے ہیں اگر کسی ڈسٹری بیوٹر کے خلاف کاروائی رکوانی ہوتو طارق مسعود فاروقی کو ایک مخصوصی فون نمبر سے کال کرکے کاروائی ٹھپ کرادی جاتی ہے۔ یاد رہے کہ علی پور کے سات ڈسٹری بیوٹروں نے اپنے اپنے سٹور بنائے ہوئے ہیں اوران سات ڈسٹری بیوٹروں میں سیل کئیر،عثمان ڈسٹری بیوٹیشن،آئی بی ایل،علی فارما،زید اے ،المدینہ،زین ڈسٹری بیوٹرز یہ وہ لوگ ہیں جنہوں نے گزشتہ روز کرپٹ ڈرگ انسپکٹ ر کے بچاﺅ کیلئے اس کے حق میں بیانات چلوائے اور شٹرڈاﺅن کی دھمکیاں دیں۔ کیمسٹ ایسوسی ایشن علی پور کے عہدیداران اس کرپٹ افسر کو بچانے کیلئے سیاسی اناﺅں کے آگے ترلے کررہے ہیں ۔یاد رہے کہ ان ڈسٹری بیوٹران کے پاس انسانی زندگی بچانے والی ادویات ہوتی ہیں اور یہ لوگ جان بوجھ کر شاٹنگ بھی کرتے ہیں تاکہ بلیک میں ادویات فروخت کرسکیں۔اس شاٹنگ کیلئے انہیں کرپٹ ملازم حامد رضا اورڈرگ انسپکٹر کی آشیرباد حاصل ہوتی ہے۔یاد رہے کہ گزشتہ شب ان کیمسٹ ایسوسی ایشن کے عہدیداران اورڈسٹری بیوٹروں کا ایک ہنگامی اجلاس حامد رضا کے گھر پر منعقدہواجس میں ڈرگ انسپکٹر طارق مسعود فاروقی نے کہا کہ میں نے آپ لوگوں کے حکم پر ہمیشہ کاروائیاں کیں ۔اتائی ڈاکٹروں کو پروڈکشن دی آپ کے سٹور سیل نہیں کئے۔خیرپور ،سلطان پور،خانگڑھ دوئمہ میں جو بھی کاروائی کی آپ لوگوں کے حکم پر چالان واپس ہی نہیں کئے بلکہ ان کی دوکانوں کی سیل بھی ڈی سیل کردی اب مجھ پر اورحامد رضا پر براوقت آگیا ہے ۔وزیرصحت یاسمین راشد اورکمشنر ڈیرہ کے ساتھ ڈی ایچ او مظفرگڑھ اور صحافی میرے خلاف ہوچکے ہیں آپ لوگ میری کیا مدد کرسکتے ہیں جس پر تجمل نامی شخص اورچوہدری آفتاب نے انہیں یقین دلایا کہ ہماری بات ایک ایم پی اے سے ہوگئی ہے وزیرصحت کی جانب سے آپ کے خلاف کاروائی نہیں ہونے دی جائے گی۔ باقی رہے صحافی توان سے بات کرلیں گے ۔جس پرحامد رضا نے کہا کہ ڈی ایچ او مظفرگڑھ سلیم اکبر لغاری ایک ظالم آدمی ہے۔وہ کسی کی بات نہیں مانتا اس کی سفارش تلاش کریں۔ علاوہ ازیں پی ٹی آئی ڈاکٹرفورم کے سینئر رکن ڈاکٹر زبیر قادرگٹ نے صحافیوں سے گفتگوکرتے ہوئے کہا کہ صحافیوں نے ایک کرپٹ ڈرگ انسپکٹر کے کرتوت چھاپ کرحق کا بول بالا کردیا ۔میںصحافیوں کو سلام پیش کرتاہوں۔ تاہم اخبارات کی کٹنگ اوردیگر ثبوت صوبائی وزیر یاسمین راشد کو بھجوادیئے ہیں۔ انشاءاللہ اس کرپٹ ڈرگ انسپکٹر کے خلاف کاروائی ہرصورت کی جائے گی۔ حکومت کسی کرپٹ افسرکو برداشت نہیں کرتی۔ عمران خان کسی بھی افسر کو کرپشن کی اجازت نہیں دیتے نہ ہی ایسے لوگوں کو بردشت کیاجائے گا۔

مزید : ملتان صفحہ آخر