ڈیرہ ‘ کرپشن کیس میں اویس خان لغاری کی عبوری ضمانت منظور

ڈیرہ ‘ کرپشن کیس میں اویس خان لغاری کی عبوری ضمانت منظور

ڈیرہ غازی خان (سٹی رپورٹر ) سپیشل انٹی کرپشن جج ڈیرہ غازی خان نے مسلم لیگ (ن) پنجاب کے جنرل سیکریٹری سابق وفاقی وزیرسردار اویس احمد خان لغاری کی عبوری ضمانت قبل از گرفتاری منظور کر لی ہے۔اور آئندہ تاریخ سماعت 22مئی مقرر کی ہے تفصیلات کے مطابق تھانہ انٹی (بقیہ نمبر20صفحہ12پر )

کرپشن ہیڈ کوارٹر ڈیرہ غازی خان نے سردار اویس احمد خان کے خلاف مقدمہ درج کیا تھا جس مین ان پر بطور چیئرمین جنوبی پنجاب فاریسٹ کمپنی میں کرپشن کرنے اور محکمہ جنگلات کی ہزاروں ایکڑ اراضی کم قیمت پر الاٹ کرنے کا الزام عائد کیا گیا تھا اویس خان لغاری آج اپنے وکلا کے ہمراہ سپیشل انٹی کرپشن جج ڈیرہ غازی خان عبدالرحمن بودلہ کی عدالت میںحاضر ہوئے اور عبوری ضمانت قبل از گرفتاری کی درخواست گزاری جس میں انہوںنے انٹی کرپشن کے مقدمہ کوبے بنیاد اور من گھڑت قرار دیا جس میں کرپشن کا کوئی ثبوت نہ دیا گیا ہے جس کا مقصدعوام میں ان کی ساکھ خراب کرنے کے سوا کچھ نہ ہے۔درخواست میں مزید کہا گیا ہے کہ گورنر پنجاب نے سیکشن 678.A(2) آف فارسٹ ترمیمی ایکٹ 2016کے تحت ساو¿تھ پنجاب فاریسٹ کمپنی کو اراضی سپرد کی تھی محکمہ انٹی کرپشن کو درخواست گزار کے خلاف سیکشن 409 آف پاکستان پینل کوڈ1860 کے تحت کاروائی کرنے کا اختیار نہ ہے کیونکہ درخواست گزار سرکاری ملازم نہ ہے اور نہ ہی بطور چیئرمین SPFC کوئی مالی مفاد حاصل کیا ہے محکمہ انٹی کرپشن نے ان کے خلاف غیر قانونی انکوائری شروع کی ہے۔جبکہ فاریسٹ کمپنی کا پراجیکٹ مکمل طور پر قانون کے مطابق تھا اور اراضی کی نیلامی کا عمل پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ ایکٹ4 201 اور طے کردہ رولز کے مطابق شفاف طریقے سے کیا گیا اور SPFCکے بورڈ آف ڈائریکٹرز نے متفقہ طور پر فیصلے کیے درخواست میں مزید کہا گیا کہ وہ ایک قانون پسندشہری ہیں اور شاندار ماضی کے حامل ہیں وہ وفاقی وزیر توانائی اور ممبرقومی اسمبلی رہے ہیں ان کے خلاف یہ مقدمہ بد نیتی پر مبنی ہے جس کا مقصد درخواست گزا رکی ساکھ کو عوام کی نظروں میں خراب کرنا ہے فاضل جج نے درخواست منظور کرتے ہوئے سردار اویس خان لغاری کی عبوری ضمانت قبل از گرفتاری15 روز کے لیے منظور کر لی آئندہ تاریخ سماعت 22 مئی مقرر کی گئی ہے وکلا کے پینل میں رانا محمد آصف ،یعقوب خان، سید طیب بخاری اور مرزا خرم رزاق شامل تھے۔

ضمانت منظور

مزید : ملتان صفحہ آخر