اسٹاک ایکسچینج میں تیزی کا رجحان ،13ارب 57کروڑ روپے کی سرمایہ کاری

  اسٹاک ایکسچینج میں تیزی کا رجحان ،13ارب 57کروڑ روپے کی سرمایہ کاری

کراچی (اکنامک رپورٹر)پاکستان اسٹاک ایکسچینج سے مندی کے بادل چھٹ گئے کاروباری ہفتے کے دوسرے روز منگل کو اتارچڑھاﺅ کے بعد محدودپیمانے پر تیزی رہی اور کے ایس ای100انڈیکس 35600کی نفسیاتی حد پر مستحکم رہا،تیزی کے نتیجے میںسرمایہ کاری مالیت میں 13 ارب 57 کروڑ روپے سے زائدکااضافہ ،کاروباری حجم گذشتہ روز کی نسبت8.47فیصدکم جبکہ64.78فیصد حصص کی قیمتوں میں کمی ریکارڈ کی گئی۔حکومتی مالیاتی اداروں مقامی بروکریج ہاﺅسز سمیت دیگرانسٹی ٹیوشنز کی جانب سے توانائی،سیمنٹ،بینکنگ اور دیگرمنافع بخش سیکٹرمیں خریداری کے باعث کاروبار کا آغاز مثبت زون میں ہواا۔ غیرملکی سرمایہ کاروں کی جانب سے خریداری کی گئی ، جس کے نتیجے میں مارکیٹ میں ریکوری آئی اور کے ایس ای100انڈیکس کی 35600کی حدبحال ہوگئی تاہم اتارچڑھاﺅ کا سلسلہ سارادن جاری رہا،مارکیٹ کے اختتام پر کے ایس ای100انڈیکس25.64پوائنٹس اضافے سے35631.06 پوائنٹس پر بندہوا۔ماہرین اسٹاک کے مطابق آئی ایم ایف کی جانب سے پاکستانی معیشت کو طابع کرنے جیسی خبروں نے سرمایہ کاروں کو مارکیٹ سے دور رکھاہواہے ، جس کے نتیجے میں مقامی سرمایہ کارگروپ نہ صرف نئی سرمایہ کاری سے گریزکررہے ہیں بلکہ سرمائے کے انخلا کو بھی ترجیح دے رہیں، جس کے وجہ میں مارکیٹ کی صورتحال بہتر نہیں ہورہی ہے۔منگل کومجموعی طور پر284کمپنیوں کے حصص کا کاروبار ہوا،جن میں سے78کمپنیوں کے حصص کے بھاو¿میں اضافہ،184کمپنیوں کے حصص کے بھاو¿ میں کمی جبکہ22کمپنیوں کے حصص کے بھاو¿ میں استحکام رہا۔سرمایہ کاری مالیت میں 13 ارب 57 کروڑ 71 لاکھ 14 ہزار 526 روپے کااضافہ ریکارڈ کیا گیا،جس کے نتیجے میں سرمایہ کاری کی مجموعی مالیت بڑھ کر73کھرب3 ارب38 کروڑ99لاکھ54ہزار510روپے ہوگئی۔ 

سٹاک مارکیٹ 

مزید : صفحہ آخر