وزیراعظم کی زیرصدارت پی ٹی آئی کی پارلیمانی پارٹی کا اجلاس،ارکان اسمبلی غیر منتخب لوگوں کی کابینہ میں شمولیت پر پھٹ پڑے

وزیراعظم کی زیرصدارت پی ٹی آئی کی پارلیمانی پارٹی کا اجلاس،ارکان اسمبلی غیر ...
وزیراعظم کی زیرصدارت پی ٹی آئی کی پارلیمانی پارٹی کا اجلاس،ارکان اسمبلی غیر منتخب لوگوں کی کابینہ میں شمولیت پر پھٹ پڑے

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آ ن لائن)وزیراعظم عمران خان کے زیرصدارت پی ٹی آئی کے پارلیمانی پارٹی اجلاس میں ارکان اسمبلی غیر منتخب لوگوں کی کابینہ میں شمولیت پر پھٹ پڑے،ارکان اسمبلی نے گلے شکوے کرتے ہوئے کہاکہ پیراشوٹرز کی کابینہ میں شمولیت کا فیصلہ نامناسب ہے ،حکومتی پالیسیوں میں عوامی نمائندوں کا کوئی کردار نظر نہیں آرہا،ہمیں بتائیں اسدعمر کو کیوں ہٹایا گیا ہے ،جو لوگ ہزارو ںکی لیڈ سے ہارے ہیں ان کو ترجمان بنایا جا رہا ہے ،ارکان اسمبلی نے کہا کہ پارلیمنٹ میں اہل لوگ موجود،غیر منتخب لوگوں کو مسلط کرنا ناقابل قبول ہے ،اپوزیشن کو خودتنقیدکا موقع دیا جا رہا ہے ۔

وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ اسد عمر تحریک انصاف کا اثاثہ ہیں ،آپ مشورہ ضروردیں لیکن آخری فیصلہ میراہوگا،میں نے لوگوں کو جواب دینا ہے ،وزیراعظم نے کہاکہ معیشت کو ٹھیک کرنا اوراپنے فیصلوں کی ذمہ داری لیتاہوں،آپ کے تحفظات اپنی جگہ ٹھیک لیکن کچھ سخت فیصلے کرنا پڑتے ہیں،وزیراعظم کی ارکان اسمبلی کو اجلاس ختم ہوتے ہی اپنے حلقوں میں جانے کی ہدایت کی ،انہوں نے کہا کہ اپنے حلقوں میں جائیں ضلعی انتظامیہ کیساتھ ملکر رمضان پیکیج پر عملدرآمد کرائیں ۔

نیابلدیاتی نظام لانے پر ارکان اسمبلی نے وزیراعظم کی تعریف کی،پرویز خٹک نے کہا کہ پنجاب کا بلدیاتی نظام اچھا ہے ،خیبرپختونخوا کے بلدیاتی نظام میں بھی تبدیلی کی ضرورت ہے ۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد