محفوظ ٹرانزیکشن رجسٹری کی بدولت ایس ایم ایز کاروبار کو فروغ ملے گا: حفیظ شیخ

محفوظ ٹرانزیکشن رجسٹری کی بدولت ایس ایم ایز کاروبار کو فروغ ملے گا: حفیظ شیخ

  

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر،نیوز ایجنسیاں) وزارت خزانہ نے چھوٹے اور درمیانے درجے کے کاروبار کو کورونا وائرس کی وبا کے پیش نظر معاونت فراہم کرنے کیلئے پیکج پر غور کیا، پیکج ایسی صنعتوں کیلئے ہے جو کم سے کم 5 افراد اور زیادہ سے زیادہ 30 افراد کو روزگار فراہم کر رہی ہیں، اس پیکج کے تحت چھوٹی صنعتوں کی ڈیجیٹل صلاحیتوں کو بھی بہتر کرنے پر غور کیا گیا تاکہ وہ مشکل حالات میں ٹیکنالوجی کا سہارا لے کر اپنا کام جاری رکھ سکیں۔جمعرات کو وزارت خزانہ کی جانب سے جاری کئے گئے،اعلامیہ کے مطابق مشیر خزانہ ڈاکٹر عبدالحفیظ کی زیر صدارت وزارت خزانہ میں اہم اجلاس ہوا، اجلاس میں چھوٹے اور درمیانے درجے کے کاروبار کو کورونا وائرس کی وبا کے پیش نظر معاونت فراہم کرنے کیلئے پیکج پر غور کیا گیا، اجلا س میں وزیر صنعت و پیداوار حماد اظہر سمیت عالمی بنک اور وزارت خزانہ کے اعلی حکام نے شرکت کی، پیکج ایسی صنعتوں کیلئے ہے جو کم سے کم 5 افراد اور زیادہ سے زیادہ 30 افراد کو روزگار فراہم کر رہی ہیں۔کاروبار کا رجسٹر ہونا لازمی نہیں مگر کاروبار کی موجودگی کی تصدیق کیلئے 3 قسم کے ثبوت فراہم کرنا ہونگے۔اس پیکج کے تحت چھوٹی صنعتوں کی ڈیجیٹل صلا حیتوں کو بھی بہتر کرنے پر غور کیا گیا تاکہ وہ مشکل حالات میں ٹیکنالوجی کا سہارا لے کر اپنا کام جاری رکھ سکیں۔حکومت ان لوگوں کی مدد کا عزم رکھتی ہے جو اس قابل نہیں کہ مشکل وقت میں اپنے کاروبار کی جامد لاگت کو بھی پورا کرسکیں۔ اس پیکج پر عملدرآمد کیلئے سمیڈا اور پنجاب آئی ٹی بورڈ کی معاونت درکار ہوگی۔دریں اثناء سٹیٹ بنک اور سیکورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن آف پاکستان (ایس ای سی پی) کے تعاون سے سکیور ٹرانزیکشن رجسٹری کا افتتاح کردیا گیا، مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ نے کہا چھوٹے اور درمیانے درجے کو تحفظ ہماری اولین ترجیح ہے۔ چھوٹے اور درمیانے درجے کی صنعت اپنے صلاحیت کے مقابلے میں صرف دس فیصد پیداوار دے رہی ہے، مالکاری سہولیات کی نامناسب رسائی کی وجہ سے چھوٹے کاروبار کی پیداوار کم ہے، سکیور رجسٹری سے چھوٹے اور درمیانے درجے کی صنعتوں کو مالیاتی سہولیا ت کی فراہمی میں بہتری آئی گے،رجسٹری کی بدولت چھوٹے اور درمیانے درجے کی صنعتوں کے کاروبار کو فروغ ملے گا۔ جمعرات کو سٹیٹ بنک اور ایس ای سی پی کے تعاون سے سکیور ٹرانزیکشن رجسٹری کا افتتاح کیا گیا، افتتاحی تقریب میں مشیر خزانہ ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ سمیت عالمی بنک، ڈی ایف آئی ڈی، سرمایہ کاری بورڈ، کارانداز اور وزارت خزانہ کی اعلی حکام نے شرکت کی، مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ نے کہا کہ چھوٹے اور درمیانے درجے کو تحفظ ہماری اولین ترجیح ہے۔ چھوٹے اور درمیانے درجے کی صنعت اپنے صلاحیت کے مقابلے میں صرف دس فیصد پیداوار دے رہی ہے۔ مالکاری سہولیات کی نامناسب رسائی کی وجہ سے چھوٹے کاروبار کی پیداوار کم ہے۔سکیور رجسٹری سے چھوٹے اور درمیانے درجے کی صنعتوں کو مالیاتی سہولیات کی فراہمی میں بہتری آئی گے۔رجسٹری کی بدولت چھوٹے اور درمیانے درجے کی صنعتوں کے کاروبار کو فروغ ملے گا۔سکیور رجسٹری سے خصو صی طور پر چھوٹی صنعتیں مستفید ہونگی جن کے پاس گروی رکھنے کیلئے غیر منقولہ جائیداد نہیں ہے۔سکیور رجسٹری کی بدولت چھوٹی صنعتیں منقولہ جائیداد گروی رکھ سکیں گے جیسے کہ مشینر ی وغیرہ شامل ہیں۔

حفیظ شیخ

مزید :

صفحہ آخر -