ریا ض نائیکو کی شہادت آزادی کشمیر کی منزل مزید قریب، نیا جذبہ پیدا کرے گی: سراج الحق

      ریا ض نائیکو کی شہادت آزادی کشمیر کی منزل مزید قریب، نیا جذبہ پیدا کرے ...

  

لاہور (آئی این پی)امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ ریاض نائیکو کی شہادت کشمیر میں آزادی کی منزل کو مزید قر یب کرے گی۔برہان وانی کی شہادت کے بعد جس طرح آزادی کی تحریک میں نیا موڑ آیا تھااور ہزاروں اعلیٰ تعلیم یافتہ نوجوان تحریک میں شامل ہوگئے تھے، اسی طرح ریاض نائیکو کی شہادت سے کشمیری نوجوانوں میں نیا جوش و جذبہ پیدا ہوا ہے۔ بھارتی قابض فوج کشمیری قیاد ت کو چن چن کر قتل کررہی ہے۔گزشتہ نو ماہ سے مقبوضہ کشمیر میں بدترین لاک ڈاؤن ہے۔کورونا کی عالمی وباء کے دوران بھارتی فوج نے ظلم و جبر کے تمام سابقہ ریکارڈ توڑ دیئے ہیں، اورکورونا کو معصوم کشمیریوں کیخلاف ہتھیار کے طو رپر استعمال کررہی ہے۔ایک طرف کشمیری اپنے گھروں میں محصور ہیں، دوسری طرف قابض فوج گھرگھر تلاشی کی آڑ میں کشمیری نوجوانوں کوڈھونڈ ڈھونڈ کرشہید کررہی ہے۔ بھارت تمام تر مظالم اور جبر و تشدد کے باوجود آزادی کی تحریک دبا نہیں سکے گا۔اقوام متحدہ اور عالمی برادری کشمیر میں بھارتی مظالم کورکوائے اور کشمیریوں سے حق خود ارادیت کے اپنے وعدے کو پورا کرے۔وہ گزشتہ روز منصورہ میں ریاض نائیکو شہید کی غائبانہ نماز جنازہ سے قبل گفتگو کررہے تھے،سینیٹر سراج الحق کا مزید کہنا تھا کشمیر کی آزادی نوشتہ ئ دیوار ہے، آزادی کی تحریک کو بھارت پون صدی میں نہیں دبا سکا،اس کے ظلم و جبر کے تمام تر ہتھکنڈے آئندہ بھی ناکام رہیں گے۔بھارتی افواج کی درندگی جیسے جیسے بڑھ رہی ہے،کشمیریوں میں آزادی کی تڑپ میں بھی اضافہ ہوتا جارہا ہے۔ اٹھارہ ہزار کشمیر ی نوجوانوں کو اٹھا کر بھارتی جیلوں میں قید کردیا گیا ہے، ہزاروں بھارتی فوج کے عقوبت خانوں اور ٹارچر سیلوں میں بند ہیں مگر کشمیر کے ہر گھر سے آج بھی آزادی کے نعرے سنائی دیتے ہیں۔ مودی سمجھتا تھا کشمیر کی آئینی حیثیت بدلنے،حر یت قیادت کو نظر بند اور ہزاروں نوجوانوں کو اٹھا کر غائب کردینے سے کشمیر پر اس کی گرفت مضبوط ہوجائے گی مگر حالات نے ثابت کردیا بھارتی افواج کو پہلے سے بھی زیادہ مزاحمت کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔ کشمیر ی حق خودارادیت اور آزادی کے مطالبے سے پیچھے نہیں ہٹیں گے۔ کشمیر پاکستان کیلئے زندگی اور موت کا مسئلہ ہے،کشمیر کے بغیر پاکستان نامکمل ہے۔افسوس ہماری حکومتوں نے مسئلہ کشمیر کو پس پشت ڈالے رکھا، حکمران بھارتی سرکار سے ہاتھ ملانے کیلئے کشمیریوں کی مدد سے ہاتھ کھینچتے رہے جس کی وجہ سے کشمیر کی آزادی کی منزل آج تک حاصل نہیں ہوسکی۔ کشمیریوں کی آزادی کیلئے پیش کردہ قربانیاں انسانی تاریخ کا روشن باب ہے۔حکومت کا فرض ہے اقوام متحدہ،او آئی سی،یورپی یونین اور ایمنسٹی انٹرنیشنل سمیت مختلف عالمی فورمز پر اس مسئلے کو دوبارہ اجاگر کرے، عالمی برادری کو کشمیر میں استصواب رائے کروانے پر مجبو ر کیا جائے تاکہ کشمیریوں کو بھارت کے پنجہئ استبدادسے آزاد ی مل سکے۔

سراج الحق

مزید :

صفحہ آخر -