کورونا وائرس اس وقت پوری دنیا کیلئے خوف کی علامت: ڈاکٹر اقبال شاہین

کورونا وائرس اس وقت پوری دنیا کیلئے خوف کی علامت: ڈاکٹر اقبال شاہین

  

 پشاور(سٹی رپورٹر) فرنٹیر ہومیو پیتھک مڈیکل کالج حیات آباد کے ڈائریکٹر اور ممتاز ہومیو معالج ڈاکٹر اقبال شاہین نے کہا ہے کہ کورونا وائرس اس وقت پوری دنیا کے لئے خوف کی علامت بنی ہوئی ہے اور دنیا بھر کے ممالک کے ماہرین طب سرتوڑ کوششوں کے باوجود نہ ہی کورونا کے علاج کے لئے کوئی دوائی بناسکے اور نہ ہی کورونا وائرس سے بچاوکے لئے کوئی ویکسین بنانے میں کامیابی حاصل کرسکے دوسری طرف دنیاس بھر میں مہلک وائرس سے لاکھوں انسانی جانیں ظائع ہوئی ہیں۔پشاور پریس کلب میں خیبر ہومیوپیتھک مڈیکل کالج کے پرنسپل ڈاکٹر قرۃ العین اور دیگر ہومیو ڈاکٹروں نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا اس وقت ضرورت اس امر کی ہے کہ انسانی جانیں بچانے کے لئے ماہرین طب چاہئے وہ انگریزی ادویات بنانے والے ہوں یا ہومیوپیتھک طریق علاج سے وابستہ ماہرین ہوں اپنا مسلمہ کردار ادا کریں، انہوں نے کہا چونکہ ادویات کی عالمی کاروبار پرملٹی نیشنل فارماسیو ٹیکل کمپنیوں کی بالادستی ہے لہذا یہ ملٹی نیشنل کمپنیاں ہومیوپیتھک طریق علاج کو اپنے کاروبار کے لئے خطرہ گردانتے ہوئے ہومیوپیتھی کے شعبے کو اگے بڑھنے سے روکنے کے لئے مختلف حربے استعمال کر رہے ہیں اور اکثر ممالک میں حکومتیں ان کے اعشاروں پر چلتے ہوئے ہومیوپیتھک تعلیم کے شعبے کو نظر انداز کررہے ہیں۔ ڈاکٹر اقبال شاہیں نے مزید کہا انڈیا میں موجودہ کورونا بحران کے دوران ہومیوپیتھک ادویات کی افادیت کو دیکھتے ہوئے حکومت نے سرکاری سطح پر ہومیوپیتھک طریق علاج کے زریعے کورونا کے متاثرین کا علاج کرایا ہے جس کے نہایت ہی مثبت اثرات برآمد ہوئے ہیں، انہوں نے کہا کہ خصوصی طور پر Arsenic Alb 30نامی دوائی(ٹیبلٹس) کو کورونا کے خلاف قوت مدافعت بڑھانے کے لئے اکثیر کا درجہ حاصل ہے اور انڈیا میں بڑے پیمانے پر اس ٹیبلٹ کے استعمال کے زبردست نتائج برآمد ہوئے ہیں۔ارسینک الب 30گولیاں روزانہ ایک گولی مسلسل 7دن تک کھانے سے انسانی جسم میں قوت مدافعت میں نمایاں اضافے کا باعث بنتا ہے جسے انسانی جسم کورونا وائرس کے خلاف سرگرم ہو کر کورونا وائرس کو بے اثر بناتا ہے۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ اس میڈیسن کے حوالے سے حکومت عملی اقدامات اٹھائے اور اس پر تحقیق کریں تا کہ کرونا کے بڑھتے ہوئے کیسز ز کو روکا جا سکیں

مزید :

پشاورصفحہ آخر -