بھارتی شہری 3خواتین کو چڑیل قرار دے کر ان کے ساتھ رات بھر کیا کرتے رہے؟

بھارتی شہری 3خواتین کو چڑیل قرار دے کر ان کے ساتھ رات بھر کیا کرتے رہے؟
بھارتی شہری 3خواتین کو چڑیل قرار دے کر ان کے ساتھ رات بھر کیا کرتے رہے؟

  

پٹنہ(ڈیلی پاکستان آن لائن) خواتین کیلئے بدترین سمجھے جانے والے ملک بھارت میں ایک بار پھر خواتین کے ساتھ شرمناک سلوک کا واقعہ پیش آگیا۔ بھارتی ریاست بہار میں دو درجن افراد نے تین خواتین کو چڑیل قرار دیتے ہوئے نہ صرف رات بھر تشدد کا نشانہ بناتے رہے بلکہ ان کے کپڑے پھاڑدیے، بال کاٹ دیے اور انہیں انسانی فضلہ کھانے پر مجبورکردیاگیا۔

یہ واقعہ بہار کے ضلع مظفر پور میں پیش آیا ۔جیو نیوز کے مطابق ہسپتال میں زیرعلاج ایک متاثرہ خاتون نے تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ  اس کی دو بہنیں گاوٴں ڈاک راما آئی تھیں، ایک کو شک تھا کہ اُس پر آسیب ہے، ہم تین خواتین ایک مرد رشتے دار کے ساتھ مقامی ریلوے لائن کے پاس جا کر منتر پڑھنے لگیں۔

خاتون کے مطابق اس دوران وہاں دو درجن کے قریب لوگ آگئے اور انہوں نے تینوں خواتین کو بدترین تشدد کا نشانہ بناڈالا۔

رپورٹ کے مطابق اس دوران واقعے کی ویڈیو بھی بنائی جاتی رہی جو بعد میں سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی۔ پولیس نے ویڈیو میں موجود 15افراد کی نشاندہی کرلی جن میں سے 9 کو اب گرفتار کیاجاچکا ہے۔

خیال رہے بھارت میں خواتین پر تشدد کا یہ پہلا واقعہ نہیں ہےخواتین پر تشدد اور ان کو جنسی ہراساں کرنے کے واقعات کے اعدادوشمارمیں دنیا بھر میں سرفہرست ہے۔

نہ صرف توہم پرستی بلکہ جنسی زیادتیوں، صنفی عدم مساوات اور ہراسانی کے حوالے سے بھارت دنیا بھر میں بدنام ہے۔ مختلف واقعات میں درجنوں غیر ملکی خواتین بھی بھارت میں جنسی زیادتیوں کا نشانہ بن چکی ہیں۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -بین الاقوامی -