”اکھاڑے سے دور رہنا بالکل ایسا ہی ہے جیسے۔۔۔“ ریسلر انعام بٹ نے ایسی بات کہہ دی کہ کھیلوں کے میدان سے وابستہ ہر شخص ان کی حمایت کرے

”اکھاڑے سے دور رہنا بالکل ایسا ہی ہے جیسے۔۔۔“ ریسلر انعام بٹ نے ایسی بات کہہ ...
”اکھاڑے سے دور رہنا بالکل ایسا ہی ہے جیسے۔۔۔“ ریسلر انعام بٹ نے ایسی بات کہہ دی کہ کھیلوں کے میدان سے وابستہ ہر شخص ان کی حمایت کرے

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان کے ٹاپ ریسلر انعام بٹ نے کہا ہے کہ لاک ڈاؤن کے دوران ریسلنگ اور اکھاڑے سے دور رہنا ایسا ہی ہے جیسے کسی مچھلی کو پانی سے باہر نکال دیا گیا ہو، میں اس وقت ریسلنگ کی واپسی کیلئے کچھ اس ہی طرح سے بے قرار ہوں۔ 

تفصیلات کے مطابق نجی خبر رساں ادارے کو دئیے گئے انٹرویو میں انعام بٹ کا کہنا تھا کہ اس وقت دنیا میں کہیں بھی ریسلنگ کے مقابلے نہیں ہورہے، اکھاڑے بھی بند ہیں اور سماجی فاصلے کی وجہ سے کھلاڑیوں کیساتھ پریکٹس بھی نہیں کر سکتا اور یہ سب روٹین میں بہت مس کر رہا ہوں لیکن اس کیساتھ ہی خود کو فٹ رکھنے کیلئے گھر ہی میں مختلف ایکسرسائز رہاہوں تاکہ فٹنس برقرار رکھی جا سکے۔

انعا م بٹ کا کہنا تھا کہ جب سب کچھ ٹھیک ہوجائے گا تو میں اکھاڑے میں جاکر سب سے پہلے تو شکرانے کے نوافل ادا کروں گا اور پھر سارے داؤ پیچ دل کھول کر آزماﺅں گا جو ان دنوں میرے دل و دماغ میں چل رہے ہیں۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ ریسلنگ ایسا کھیل ہے جس میں کھلاڑیوں کا باڈی کنٹیکٹ ہوتا ہے اور کورونا وائرس کی وباءکے بعد فوری طور پر ریسلنگ کی واپسی آسان نہیں ہوگی تاہم میں دعا گو ہوں کہ جلد سب کچھ پہلے جیسا ہوجائے اور میں ایک بار پھر ریسلنگ کیلئے ایکشن میں آ سکوں۔

واضح رہے کہ انعام بٹ نے پاکستان کیلئے گزشتہ 10سال میں متعدد گولڈ میڈلز جیتے جن میں گزشتہ برس کے ورلڈ بیچ گیمز، دو مرتبہ کامن ویلتھ گیمز، دو مرتبہ ورلڈ بیچ ریسلنگ چیمئن شپ ،د و مرتبہ ساؤتھ ایشین گیمز اور 2016ءکے ایشین بیچ گیمز کے گولڈ میڈل شامل ہیں۔

مزید :

کھیل -