شہباز شریف کو ائیرپورٹ روکےجانےپر ن لیگ سخت برہم ، مریم اورنگزیب نے وزیراعظم کو ذمہ دار قرار دے دیا

شہباز شریف کو ائیرپورٹ روکےجانےپر ن لیگ سخت برہم ، مریم اورنگزیب نے وزیراعظم ...
شہباز شریف کو ائیرپورٹ روکےجانےپر ن لیگ سخت برہم ، مریم اورنگزیب نے وزیراعظم کو ذمہ دار قرار دے دیا

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف میاں شہباز شریف کو لاہور ائیرپورٹ پر ہائی کورٹ کے حکم کے باوجود  بیرون ملک جانے سے روکے جانے پر مسلم لیگ ن نے سخت ردعمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ عدالت کے تحریری احکامات کے بعد شہباز شریف کا ایک اور لسٹ میں نام  شامل کرنا توہینِ عدالت ہے،وکلاء سےمشاورت جاری ہے،توہین عدالت کا نوٹس دینگے۔

تفصیلات کے مطابق مسلم لیگ ن کی مرکزی ترجمان مریم اورنگزیب نے شہباز شریف کو لاہور ائیرپورٹ پر روکے جانے کی سخت مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ عمران صاحب کے حکم پر ایف آئی اے توہین عدالت کر رہی ہے،لاہور ہائی کورٹ کے فیصلے کے وقت ایف آئی اے کے دو افسران کمرہ عدالت میں موجود تھیں اور یہاں یہ کہا جا رہا ہے کہ سسٹم آپ ڈیٹ نہیں ہوا ،عدالت نے وَن ٹائم پرمیشن دی تھی اور ائیر لائین کا نمبر بھی درج ہے تحریری حکم نامے میں.انہوں نےکہا کہ وکلاء سےمشاورت جاری ہے، توہین عدالت کا نوٹس دینگے۔

اس سےقبل  مریم اورنگزیب نے بیرسٹرشہزاد اکبر کے بیان پہ ردِ عمل دیتے ہوئے کہا تھا کہ  شہزاد اکبر صاحب خود کے کاغذ پہ بنائے خاکے کرپشن ثابت نہیں کرتے ، عدالت میں جھوٹ نہیں ثبوت ہونے چاہئیں، شہزاد اکبر نے جتنے کیس بنائے،کسی میں بھی عدالت میں ثبوت پیش نہ کرسکے۔انہوں نے کہا کہ عمران صاحب کے حسد اور سیاسی انتقام کے سب ہی مقدمات میں الحمداللہ شہبازشریف کی ضمانت ہوچکی ہے، اب کرائے کے ترجمان اور عمران صاحب کے ٹاوٹ، روئیں، پیٹیں یا چیخیں لیکن ایک دھیلے کی کرپشن ثابت نہ کرسکے، آپ صرف پی آئی ڈی میں تقریریں کریں، جھوٹے کاغذ لہرائیں،ثبوت مانگنے پر نیب، ہائی کورٹ اور سپریم کورٹ سے بھاگ جائیں،آپ کے ٹویٹ اور جھوٹے کاغذ سب مسترد ہوچکے ہیں۔

یاد رہے کہ شہباز شریف کو لاہور ائیرپورٹ پر بیرون ملک جانے سے روک دیا گیا ،ایف آئی اے امیگریشن حکام کا کہنا تھا کہ  وزارت داخلہ کی جانب سے ن لیگی صدر کا نام تاحال بلیک لسٹ سے نہیں نکالا گیا، سسٹم میں کلیئرنس جاری نہیں ہوئی، امیگریشن سسٹم میں اپ ڈیٹ نہ ہونے سے انہیں آف لوڈ کردیا گیا لہٰذا نام کلئیر ہونے پر جہاز میں سوار ہونے کی اجازت دی جائے گی۔

مزید :

قومی -