پنجاب اسمبلی ،تحریک انصاف کے استعفوں کی منظوری کے معاملے پر ڈیڈ لاک برقرار

پنجاب اسمبلی ،تحریک انصاف کے استعفوں کی منظوری کے معاملے پر ڈیڈ لاک برقرار

لاہور (نمائندہ خصوصی)تحریک انصاف کے اراکین پنجاب اسمبلی کے استعفوں کی منظوری کے معاملے میں ڈیڈ لاک برقرار ہے ، تحریک انصاف کے اراکین پنجاب اسمبلی کے اسمبلی سیکریٹریٹ آنے کے باوجود پیش رفت نہ ہو سکی ، تمام اراکین استعفوں کی تصدیق کے لئے اکٹھے سپیکر کے پاس جانے اور سپیکر سب اراکین کو فرداً فرداً بلانے پربضد رہے ۔ تفصیلات کے مطابق تحریک نصاف کے 29ارکین پنجاب اسمبلی نے 27اگست کو اپنے استعفے سپیکر پنجاب اسمبلی کو بھیجے تھے جبکہ ایک رکن اسمبلی نگہت انتصار نے استعفیٰ دیا نہ ہی وہ گزشتہ روز بھی اپنی پارلیمانی پارٹی کے ارکان کے ساتھ آئیں ۔سپیکر رانا اقبال کی طرف سے بلائے جانے پر تحریک انصاف کے تمام اراکین اسمبلی اپوزیشن لیڈر میاں محمود الرشید کی زیرقیادت اپنے استعفوں کی تصدیق کے لئے گزشتہ روز اسمبلی سیکرٹیریٹ پہنچ گئے تاہم تمام اراکین اسمبلی کانفرنس روم میں بیٹھ کر سپیکر رانا اقبال کا انتظار کرتے رہے جبکہ سپیکر اسمبلی بضد تھے تمام اراکین ان کے چیمبر میں فرداً فراداً استعفوں کی تصدیق کے لئے آئیں یہ سلسلہ صیح 11بجے سے سہ پہر ساڑھے تین بجے تک جاری رہا ۔اس دوران سیکریٹری اسمبلی رائے ممتاز نے کانفرنس روم میں جا کر تحریک انصاف کے اراکین اسمبلی کو بتایا کہ آئین کے مطابق استعفوں کی تصدیق کے لئے تمام اراکین کا الگ الگ سپیکر کے چیمبر میں جانا ضروری ہے تاہم میاں محمود الرشید نے انہیں کہا کہ ہم کانفرنس روم میں ہی بیٹھے ہیں سپیکر یہاں آکر سب سے اکٹھے ہی تصدیق کر لیں ۔ بعدازاں سپیکر اسمبلی کے کہنے پر سابق صوبائی وزیر رانا ثنا اللہ اور ترجمان پنجاب حکومت زعیم قادری بھی تحریک انصاف کے اراکین کے پاس گئے اور انہیں کہا کہ استعفوں کی تصدیق کے لئے سب اراکین کا فرداً فرداً سپیکر کے چیمبر میں جانا ضروری ہے مگر وہ بھی کامیاب نہ ہو سکے ۔ بعد ازاں نماز جمعہ کے وقفے کے بعد تمام اراکین اسمبلی دوبارہ واپس آکر کانفرنس روم میں بیٹھ گئے اور سپیکر کی طرف سے مقرر کردہ وقت تک بیٹھے رہے ۔ بعد ازاں تمام راکین اٹھ کر باہر آگئے اور اس موقع پر میاں محمود ارشید نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ تحریک انصاف کے 29اراکین اسمبلی اپنے دئیے گئے استعفوں کی تصدیق کے لئے صبح 11سے سہ پہر ساڑھے تین بجے تک کانفرنس روم میں بیٹھ کر سپیکر کا انتظار کیا مگر وہ ساتھ والے کمرے میں بیٹھے رہے مگر وہ ہمارے پاس نہیں آئے حالانکہ انہیں ہم نے دو با رپیغام بھی بھجوایا تھا ۔ انہوںنے کہا کہ کوئی استعفیٰ مشکوک نہیں ہے اس کا ثبوت یہ ہے کہ استعفے دینے والے تمام اراکین یہاں موجود ہیں ۔

استعفی

مزید : صفحہ اول


loading...