پاک چین اقتصادی راہداری سے 10لاکھ پاکستانیوں کو روزگار ملے گا:نواز شریف

پاک چین اقتصادی راہداری سے 10لاکھ پاکستانیوں کو روزگار ملے گا:نواز شریف

             بیجنگ/اسلام آباد/لاہور(اے این این،خصو صی رپورٹ )وزیراعظم نوازشریف چین کے تین روزہ سرکاری دورے پربیجنگ پہنچ گئے جہاں وہ (آج)ہفتہ کوایشیاءبحرالکاہل اقتصادی تعاون تنظیم کے سربراہ اجلاس میں شرکت کریں گے ،وزیراعظم بیجنگ میں قیام کے دوران چین کے صدرژی جن پنگ اوروزیراعظم لی کی کیانگ سمیت دیگراعلیٰ حکام سے بھی ملاقاتیں کریں گے جن میں علاقائی صورتحال اور دوطرفہ تعلقات کے بارے میں تبادلہ خیال کیاجائے گا جبکہ اس موقع پر دونوں ممالک کے درمیان35 سے 40 ارب ڈالر کے منصوبوں پر دستخط ہوں گے ۔ان منصوبوں میں توانائی سمیت انفراسٹرکچر ، گوادر اور دیگر منصوبے شامل ہیں۔ وزیراعظم کے ہمراہ وزرات پانی و بجلی ، وزارت پلاننگ ڈویژن ، وزارت اطلاعات اور دیگر وزارتوں کے حکام ہیں۔ ترجمان وزیر اعظم ہاو¿س کے مطابق وزیراعظم محمد نواز شریف مختصر وفد کے ہمراہ چین کے دورے پر روانہ ہو ئے ۔ وزیر اعظم کا یہ سرکاری دورہ تین روز پر مشتمل ہے ۔ آٹھ رکنی وفد میں وزیراعظم کے ہمراہ وفاقی وزرا ءشاہد خاقان عباسی، احسن اقبال، معاون خصوصی برائے خارجہ امور طارق فاطمی اور دیگر حکام شامل ہیں ۔ وزیراعظم کے دورے سے دوطرفہ تعلقات مزید مضبوط ہوں گے۔ریڈیوپاکستان کے مطابق وزیراعظم کے اس دورے کے دوران دونوں ممالک جن منصوبوں کے حوالے سے معاہدوں پر دستخط کریں گے ان میں چودہ منصوبے دس ہزار چار سو میگاواٹ بجلی کی پیداوار سے متعلق ہیں جبکہ دیگر میں بنیادی ڈھانچے اور بلوچستان میں گوادر بندرگاہ کی ترقی اورچین پاکستان اقتصادی راہداری کے ایک حصے کے طور پر خضدار گوادر شاہراہ کی تعمیر بھی شامل ہے۔اس کے علاوہ دونوں ممالک ریلوے اور خصوصی اقتصادی زونز کے قیام میں تعاون کے معاہدوں پر بھی دستخط کریں گے۔ چین روانگی سے قبل ایئرپورٹ پر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے نوازشریف نے کہا کہ وہ عوام کو گرمیوں میں لوڈ شیڈنگ کی مصیبت سے بچانے کیلئے چین جا رہے ہیں ، پاک چین تعلقات اور معاہدوں سے ملکی اور غیر ملکی سرمایہ کاری کو فروغ ملے گا۔ پاک چین اقتصادی راہداری سے ملکی معیشت پر دور رس اثرات مرتب ہونگے اورمختلف منصوبوں سے پاکستان کے 10 لاکھ سے زائد نوجوانوں کو روزگار ملے گا۔ وزیراعظم نے کہاکہ گذشتہ دو ماہ میں ملک میں سیاسی بحران کے باعث ہونے والے نقصانات کا ازالہ کریں گے اوران نقصانات کے اثرات ختم کیے جائیں گے۔ وزیراعظم نے کہا کہ انہوں نے پاکستان کی بہتری کے لئے ہر ممکن اقدامات کا عزم کر رکھا ہے۔

نوا ز شر ےف

مزید : صفحہ اول