تحریک انصاف کے ارکان استعفوں کی تصدیق کیلئے پیش نہیں ہوئے،سپیکر پنجاب اسمبلی

تحریک انصاف کے ارکان استعفوں کی تصدیق کیلئے پیش نہیں ہوئے،سپیکر پنجاب اسمبلی

لاہور(نمائندہ خصوصی )سپیکر پنجاب اسمبلی رانا محمد اقبال خاں نے کہا ہے کہ میں ایوان کا کسٹوڈین ہوں اور اراکین اسمبلی کے حقوق کا تحفظ میری ذمہ داری ہے۔ میری نظر میں تمام اراکین اسمبلی یکساں اہمیت رکھتے ہیں۔ آئین پاکستان اسمبلی قواعد و ضوابط اور اعلیٰ عدلیہ کے فیصلوں کے روشنی میں سپیکر اس بات کا پابند ہے کہ اس امر کی تصدیق کرے آیا کسی بھی رکن اسمبلی کی طرف سے دیا گیا استعفیٰ حقیقی اور رضاکارانہ طور پر پیش کیا گیا ہے۔ یہ تاثر غلط ہے کہ استعفیٰ کی درخواست دینے کے ساتھ ہی وہ استعفیٰ موثر ہو جاتا ہے اور نشست خود بخود خالی ہو جاتی ہے اور سپیکر کا کوئی کردار نہیں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے اسمبلی سیکرٹریٹ میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ سپیکر پنجا ب اسمبلی نے پاکستان تحریک انصاف کے استعفٰے جمع کروانے والے اراکین کو تصدیق کے لیے آج 7نومبر 2014 کو اسمبلی چیمبر میں طلب کیا تھا۔ تحریک انصاف کے اراکین اسمبلی تشریف لائے تاہم وہ سپیکر چیمبرمیں تصدیق کے لیے پیش نہیں ہوئے۔ تفصیلات کے مطابق مورخہ 27اگست 2014کو پنجاب اسمبلی میں قائد حزب اختلاف میاں محمودالرشید اپنے دیگر پانچ اراکین اسمبلی کے ہمراہ اسمبلی سیکرٹریٹ تشریف لائے۔ انہوں نے سیکرٹری اسمبلی رائے ممتاز حسین بابر کے دفتر میں جا کر پاکستان تحریک انصاف کے 28اراکین پنجاب اسمبلی کے استعفوں کی دستاویزات ان کے حوالے کیں۔ مورخہ یکم ستمبر 2014کو PTIکے رکن اسمبلی جناب محمد جہانزیب خاں کھچی نے بھی سیکرٹری اسمبلی کو اپنا استعفٰی جمع کروایا۔ 5ستمبر 2014کو سپیکر رانامحمد اقبال خاں نے سیکرٹری اسمبلی کو ان تمام استعفوں کا جائزہ لینے کا حکم دیا۔انہوں نے مورخہ 10ستمبر 2014کو رپورٹ دی کہ ان استعفوں میں کچھ استعفے ایسے ہیں جو کہ حقیقتا سپیکر پنجاب اسمبلی کو address نہ کئے گئے ہیں اور ان میں سے ایک استعفی کسی کو بھیaddress نہیں کیا گیا تھا بلکہ بذریعہ faxحاصل کیا گیا تھا۔ اس کے علاہ ان استعفوں کے دیئے جانے کی جو وجوہات بیان کی گئی تھیں ان کی بناء پر سپیکر نے ضروری سمجھا کہ تمام اراکین اسمبلی کو خطوط جاری کیے جائیں کہ وہ خود آکر اپنے استعفوں سے متعلق تسلی کروائیں کہ استعفے حقیقی اور بغیر کسی دباؤ کے دیئے گئے ہیں ۔لہذا مورخہ 29ستمبر2014سے روزانہ چار چار اور پانچ پانچ اراکین اسمبلی کو اسی ترتیب کے مطابق جس ترتیب سے اسمبلی سیکرٹریٹ میں استعفٰے موصول ہوئے تھے، الگ الگ سننے اور اپنے استعفوں سے متعلق مطمئن کرنے کے بارے میں بلایا گیا۔استعفوں کی تصدیق کے لیے PTIکا کوئی رکن سپیکر کے سامنے پیش نہیں ہوا تا ہم اسی اثناء میں مورخہ 29ستمبر 2014کو قائد حزب اختلاف میاں محمودالرشید کی طرف سے ایک خط موصول ہوا کہ پاکستان تحریک انصاف کے مستعفی ہونے والے اراکین کو علیحدہ علیحدہ بلانے کی بجائے اکھٹے ہی بلایا جائے۔ انہیں مورخہ 30ستمبر 2014کوقائد حزب اختلاف کو مطلع کر دیا گیا کہ ایسا کرنانا ممکن ہے۔ بالاآخر اسمبلی سیکرٹریٹ نے مورخہ 31اکتوبر 2014کو ایک بار پھر مستعفی ہونے والے تمام اراکین کو خطوط لکھے کہ مورخہ7نومبر 2014کو بوقت 10بجے صبح اسمبلی سیکرٹریٹ میں بے شک اکٹھے تشریف لے آئیں لیکن استعفوں کی تصدیق کے لئے سپیکر چیمبر میں انہیں علیحدہ علیحدہ ہی آنا ہوگا۔

مزید : صفحہ آخر