حکومت نے آئی ایم ایف سے پھر قرض لیا جس کا بوجھ عوام پر پڑے گا،یوسف اعوان

حکومت نے آئی ایم ایف سے پھر قرض لیا جس کا بوجھ عوام پر پڑے گا،یوسف اعوان

  

لاہور(نمائندہ خصوصی)پاکستان پیپلز پارٹی علماء ونگ پنجاب کے صدر اور اسلامی نظریاتی کونسل کے رکن علامہ محمد یوسف اعوان نے کہا ہے کہ (ن) لیگ کی حکومت نے حکومت میں آنے کے بعد بڑے بڑے دعوے کئے تھے کہ ہم نے غیر ملکی بینکوں سے قرض لینا بند کردیا ہے اور کشکول توڑ دیا ہے لیکن اب آئی ایم ایف کی طرف سے 502ملین ڈالر کے مشروط قرض کی قسط منظور ہونے پر خوشی کے شادیانے بجائے اور آئی ایم ایف کی شرم ناک اور کڑی شرائط کو قبو ل کرنے کی آمادگی ظاہرکر کے ملک دشمنی کا ثبوت دیا ہے ۔ ان شرائط کو پورا کرنے کے لئے موجودہ کرپٹ حکومت جلد ہی پاکستان کے غریب عوام پر چالیس ارب روپے کی خطیر رقم کے ٹیکسز مسلط کرے گی ۔ جس سے عام اشیائے صرف اور عوام کے روز مرہ استعمال کی اشیا ء مہنگائی کی آخری حدوں کو بھی عبور کر جائے گی۔ جبکہ کرپٹ حکمران ٹولہ اور پاکستان کے معاشی معاملات کے منتظمین جوکہ اشرافیہ سے تعلق رکھتے ہیں اور جن کے بیرونی ممالک میں وسیع ترین کاروبار اور پر تعیش رہائش گاہیں ہیں ۔ اور موجودہ کرپٹ حکمران جماعت قرضوں کی یہ رقوم اپنے انہی حواریوں ، درباریوں اور مداریوں کو بانٹ دے گی۔ڈاکٹر فاروق طاہر چشتی نے مزید کہا کہ ان حکمرانوں اور اشرافیہ کو غریب عوام کے درد کا کوئی احساس نہیں ہے۔تحریک انصاف اپنے منشور کے عین مطابق پاکستان کے غریب عوام کی آواز بن کر ان ظالمانہ ٹیکسوں کے نفاذ پر اسمبلی کے اندر اور باہر قانون کی حدود میں رہتے ہوئے بھر پور مزاحمت کرے گی ۔ انہوں نے مزید کہا کہ حکمران غریب عوام پر ٹیکسوں کا مزید بوجھ ڈالنے کی بجائے ٹیکس نا دہندگان اور ٹیکس چوروں سے ٹیکس کی وصولی کے نظام کو بہتر بنائے۔منصفا نہ اور غری جانب دارانہ سروے کے ذریعے ٹیکس نا دہندگان اور ٹیکس چوروں کی نشاندہی کر کے ٹیکس نیٹ میں اضافہ کرے جس سے ملکی معیشت میں خاطر خواہ اضافہ ہوگا اور غریب عوام پر مزید ٹیکس لگانے کی ضرورت نہیں پڑے گی ۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -