پارلیمنٹ سیاسی اصلاحات کی راہ میں رخنہ نہ ڈالے: آیت اللہ سیستانی

پارلیمنٹ سیاسی اصلاحات کی راہ میں رخنہ نہ ڈالے: آیت اللہ سیستانی

بغداد ( آن لائن ) عراق کے سرکردہ شیعہ عالم دین آیت اللہ العظمیٰ علی السیستانی نے پارلیمنٹ کو خبردار کیاہے کہ وہ وزیراعظم حیدر العبادی کی جانب سے سیاسی شعبے میں اصلاحات کے فیصلے کی راہ میں رکاوٹ ڈالنے سے باز رہے۔ ان کا کہنا تھا کہ اصلاحات کا عمل آئین اور قانون کے دائرے کے اندر ہونا چاہیے مگر پارلیمنٹ کو اصلاحات کے عمل میں رکاوٹیں کھڑی کرنے کا کوئی حق نہیں ہے۔ غیر ملکی میڈٖیا کے مطابق اپنے ایک بیان میں آیت اللہ سیستانی کا کہنا تھا کہ اصلاحات کے نتیجے میں حقیقی معنوں میں ملک میں کچھ تبدیلیاں رو نما ہونا شروع ہوئی ہیں۔ اصلاحات کا عمل جاری رہا تو ان کے مطلوبہ مقاصد و اہداف کے حصول کی امید کی جا سکتی ہے۔ شیعہ عالم دین کا کہنا تھا کہ میں نے شروع دن سے اس بات پر زور دیا تھا کہ اصلاحاات کا عمل کسی سیاسی انتقام کا نتیجہ نہیں بلکہ آئین اور قانون کے دائرے کے اندر ہونا چاہیے۔ اصلاحات کا یہ مطلب ہرگزنہیں کہ اس کے نتیجے میں کوئی خاص گروپ اپنے اقتدار کو طول دینے کے لیے استعمال کرنا شروع کردے۔خیال رہے کہ عراق کے حالیہ وزیراعظم حیدرالعبادی نے حکومتی شعبے میں غیرمعمولی اصلاحات کا اعلان کیا تھا مگر پارلیمنٹ میں شامل بعض دھڑوں کی طرف سے حکومتی اقدامات کی راہ میں رکاوٹیں کھڑی کی جا رہی ہیں۔ گذشتہ سوموار کو عراقی پارلیمنٹ نے قرارداد منظور کی تھی جس میں حکومت کو اصلاحات کے عمل سے روکنے کا مطالبہ کیا گیا تھا۔

مزید : عالمی منظر