گاڑی چلانے کی اجازت نہ ہونے کے باوجود سعودی عرب میں خواتین 40فیصدحادثات کا باعث بننے لگیں:پولیس

گاڑی چلانے کی اجازت نہ ہونے کے باوجود سعودی عرب میں خواتین 40فیصدحادثات کا ...
گاڑی چلانے کی اجازت نہ ہونے کے باوجود سعودی عرب میں خواتین 40فیصدحادثات کا باعث بننے لگیں:پولیس

  

جدہ (مانیٹرنگ ڈیسک) سعودی عرب میں گاڑی چلانے کی اجازت نہ ہونے کے بعد خواتین 40فیصد حادثات کا سبب بننے لگی ہیں اور اس کا انکشاف ٹریفک پولیس چیف نے کیا۔

ہیل شہر کے ٹریفک ڈیپارٹمنٹ کے ڈائریکٹر اور پولیس چیف کرنل بندر الحربی نے کہاکہ خواتین کے علاوہ دیگر بڑی وجوہات میں بچے ، اوور سپیڈ اور سیٹ بیلٹ نہ باندھناشامل ہیں تاہم یہ واضح نہیں کیاکہ خواتین کس طرح ان حادثات کا سبب بنتی ہیں حالانکہ خواتین کے گاڑی چلانے پر بھی پابندی ہے ۔

اخبار’عکاظ‘ کے مطابق پولیس چیف کا مطلب تھاکہ خواتین بالواسطہ طورپر حادثات کا سبب بنتی ہیں جن میں ڈرائیور حضرات کیساتھ چیٹنگ اور گاڑی چلانیوالوں کی طرف سے اُنہیں گھورناشامل ہے ۔ پولیس رپورٹ کے مطابق سعودی عرب اور دیگر خلیجی ممالک ٹریفک حادثا ت کا ابتر ریکارڈ رکھتے ہیں جہاں صرف 2014ءمیں دوملین سے زائد حادثات ہوئے جن میں سے 600,000سے زائد حادثات صرف سعودی عرب میں ہوئے ۔

مزید : بین الاقوامی