بھارت میں بڑھی انتہا پسندی اور عدم رواداری کے خلاف سابق فوجی بھی میدان میں آگئے

بھارت میں بڑھی انتہا پسندی اور عدم رواداری کے خلاف سابق فوجی بھی میدان میں ...
بھارت میں بڑھی انتہا پسندی اور عدم رواداری کے خلاف سابق فوجی بھی میدان میں آگئے

  

نئی دہلی (آئی این پی )بھارت میں فنکاروں،ادیبوں ،سائنسدانوں کے بعد سابق فوجیوں نے بھی ملک میں بڑھی انتہا پسندی اور عدم رواداری کے خلاف اس بار کالی دیوالی منانے کا اعلان کرتے ہوئے اپنے اعزازتحکومت کو واپس کرنے کی دھمکی دیدی ۔بھارتی میڈیا کے مطابق ملک میں بڑھتی ہوئی انتہاپسندی اور رواداری کے خلاف فنکاروں،ادیبوں اورسائنسدانوں کے بعد سابق فوجی بھی میدان میں آگئے ہیں اور انھوں نے بطور احتجاج اس بار کالی دیوالی منانے کا اعلان کرتے ہوئے اپنے اعزازات واپس کرنے کی دھمکی دی ہے ۔میجر جنرل (ر) ستبیر سنگھ کاکہنا ہے کہ ملک بھر میں سابق فوجی احتجاج کے طور پر اپنے اعزازات لوٹا دیں گے اور اس بار ہم کالی دیوالی منائیں گے ۔بھارت میں بڑھتی ہوئی عدم رواداری اور انتہا پسندی کے خلاف اب تک کئی معروف مصنف،سائنسدان ،فلم ساز اور سماجی کارکنوں سمیت دیگر شخصیات نے اپنے ایوارڈز حکومت کو واپس کردےئے ہیں ۔احتجاج کرنے والی اہم شخصیات کا کہنا ہے کہ حکومت ملک کی اس موجودہ سنگین صورتحال کو سنبھالنے میں ناکام رہی ہے ۔واضح رہے کہ بھارت میں مسلمانوں اور دیگر اقلیتوں کے خلاف انتہا پسند ہندو تنظیم شیوسینا کی بڑھتی ہوئی کارروائیوں اور مودی سرکار کی جانب سے غیر اعلانیہ طور پر ملک میں ہندوتوا کا ایجنڈا نافذ کرنے کی کوششوں کے خلاف بھارتی ادیبوں، شاعروں اور دیگر اعتدال پسند حلقوں ، سائنسدان اور فنکار وں نے اپنے ایوارڈز واپس کردےئے ہیں۔

مزید :

بین الاقوامی -