عنقریب انسانوں کے لیے بچے پیدا کرنا مشکل ہو جائے گا کیو نکہ ۔۔۔

عنقریب انسانوں کے لیے بچے پیدا کرنا مشکل ہو جائے گا کیو نکہ ۔۔۔
عنقریب انسانوں کے لیے بچے پیدا کرنا مشکل ہو جائے گا کیو نکہ ۔۔۔

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) گلوبل وارمنگ کے دیگر کئی خطرات سے تو ہم آگاہ تھے جن میں سمندر کی سطح کا بلند ہونا، سیلاب اور خشک سالی کا آنا۔ مگر اب اس فہرست میں ایک نئے خطرے کو بھی شامل کر دیا گیا ہے اور وہ ہے شرح پیدائش میں کمی۔برطانوی نیشنل بیورو آف اکنامک ریسرچ کی رپورٹ کے طابق جو ں جوں درجہ حرارت بڑھتا جا رہا ہے لوگوں میں جنسی رغبت کم ہوتی جا رہی ہے۔ تحقیقاتی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ گرم دنوں کی نسبت سرد دنوں میں ہونے والے جنسی عمل کے نتیجے میں شرح پیدائش اعشاریہ7فیصد زیادہ ہوتی ہے۔اس کا مطلب ہے کہ بڑھتے ہوئے درجہ حرارت سے یا تو مردوخواتین میں بچہ پیدا کرنے کی صلاحیت کم ہوتی ہے یا پھر ان میں جنسی رغبت نہیں ہوتی، یا پھر یہ دونوں عوامل ہو سکتے ہیں۔

ماہرین کا کہنا تھا کہ درجہ حرارت کے باعث شرح پیدائش میں نمایاں حد تک کمی واقع ہو رہی ہے۔ گرم موسم سے ہارمون لیول متاثر ہو سکتا ہے جس کے نتیجے میں جنسی رغبت میں کمی واقع ہو سکتی ہے۔ نیواورلینز کی ٹولین یونیورسٹی کے ایسوسی ایٹ پروفیسرمسٹر بیریکا کا کہنا تھا کہ شرح پیدائش میں کمی امریکہ اور برطانیہ جیسے ملکوں کے لیے سنجیدہ مسئلہ ہے جن میں پہلے ہی شرح پیدائش بہت کم ہے۔اس سے سوشل انشورنس پروگرامز پر دباﺅ بہت بڑھ سکتا ہے کیونکہ اس سے ان ملکوں کی آبادی میں توازن بری طرح بگڑنے کا احتمال ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -