افغان طالبان کے دو دھڑوں میں جھڑپیں،80جنگجو ہلاک،درجنوں زخمی

افغان طالبان کے دو دھڑوں میں جھڑپیں،80جنگجو ہلاک،درجنوں زخمی
افغان طالبان کے دو دھڑوں میں جھڑپیں،80جنگجو ہلاک،درجنوں زخمی

  

کابل (مانیٹرنگ ڈیسک )افغان صوبے زابل میں طالبان کے دو دھڑوں میں خونریز جھڑپوں میں80 جنگجو ہلاک اور 30سے زائد زخمی ہوگئے ہیں۔عرب ٹی وی کے مطابق زابل کے نائب پولیس سربراہ غلام جیلانی فراہی نے صحافیوں کو بتایا ہے کہ دو اضلاع خاکِ افغان اور ارغنداب میں طالبان کے امیر ملّا اختر منصور اور ایک کمانڈر منصور داداللہ کے حامیوں کے درمیان لڑائی جاری ہے۔ان دونوں اضلاع پر طالبان کا کنٹرول ہے۔طالبان کے ایک کمانڈر محمد رسول کی قیادت میں ایک گروپ گذشتہ منگل کو مرکزی تحریک سے الگ ہوگیا تھا۔ منصور داداللہ انہی محمد رسول کے نائب ہیں۔اس دھڑے کے الگ ہونے کے بعد ان کی ملّا اختر منصور کے حامیوں کے ساتھ گذشتہ روز لڑائی چھڑ گئی تھی۔انکا مزید کہنا تھا کہ لڑائی میں ملّا داداللہ گروپ کے قریبا ساٹھ جنگجو اور اخترمنصور گروپ کے بیس جنگجو مارے گئے ہیں۔داداللہ گروپ کے مہلوکین میں ازبکستان سے تعلق رکھنے والے غیرملکی جنگجو بھی شامل ہیں۔صوبہ زابل کے گورنر کے ترجمان اسلام گل سیال نے طالبان کے دونوں دھڑوں کے درمیان لڑائی کی تصدیق کی ہے اور کہا ہے کہ ان میں ابھی جھڑپیں جاری ہیں۔

مزید :

بین الاقوامی -اہم خبریں -