میں ناول نگار بننا چاہتی تھی سیاست دان نہیں:فاطمہ بھٹو

میں ناول نگار بننا چاہتی تھی سیاست دان نہیں:فاطمہ بھٹو
میں ناول نگار بننا چاہتی تھی سیاست دان نہیں:فاطمہ بھٹو

  

شارجہ(پ ر)پیپلز پارٹی شہید بھٹو کی رہنما اور میر مرتضیٰ بھٹو کی بیٹی فاطمہ بھٹو نے کہا ہے کہ میں ناول نگار بننا چاہتی تھی سیاست دان نہیں۔ ان خیالات کااظہار فاطمہ بھٹو نے شارجہ بک فیئر میں شرکت کے موقع پر کیا،فاطمہ بھٹو نے کہا کہ میرے والد کو 1996میں کراچی پولیس نے ہلاک کیا،وہ پارلیمنٹ کے نامزد رکن تھےمیں ہمیشہ گھرکو دیکھتی ہوں، میں کابل میں پیداہوئی،میری پرورش پاکستان میں نہیں ہوئی گیارہ سال کی عمر میں پاکستان سے چلی گئی،میں اپنے آپ سے پوچھتی ہوں میرا گھرکہاں ہے،اس نے کہا جب یہ سوال آپ کے ذہن میں آتا ہے تو یہ دور نہیں جاتا۔فاطمہ بھٹو نے کہا میں آزاد کشمیر میں آنے والے زلزلے کے موقع پر اپنی والدہ کے ساتھ آزاد کشمیر گئی بچوں سے بھی ملی ان کے لئے ادوایات ،اورضرورت کی چیزیں بھی مہیاکیں اس کے بعد اس پر کتاب بھی لکھی جس کا نام8:50am, 8 October, 2005ہے،اس سے حاصل ہونے والی آمدن زلزلہ متاثرین پر خرچ کی،فاطمہ بھٹومختلف کتابوں کی مصنف ہیں۔شارجہ بک فیئر 14نومبر تک جاری رہے گا۔

مزید : قومی