ایران میں جعلی KFCکو بند کر دیا گیا لیکن وجہ جعلسازی نہیں تھی، اصل وجہ اتنی حیران کن کہ یقین کرنا مشکل

ایران میں جعلی KFCکو بند کر دیا گیا لیکن وجہ جعلسازی نہیں تھی، اصل وجہ اتنی ...
ایران میں جعلی KFCکو بند کر دیا گیا لیکن وجہ جعلسازی نہیں تھی، اصل وجہ اتنی حیران کن کہ یقین کرنا مشکل

  

تہران(مانیٹرنگ ڈیسک)امریکی پابندیاں اٹھنے کے بعد ایران میں امریکی فوڈ چین ’’کے ایف سی‘‘ کی ایک برانچ کھولی گئی تو وہ بھی جعلی نکلی اور افتتاح کے اگلے دن ہی پولیس نے چھاپہ مار کر اسے بند کر دیا۔ ہوٹل مالک نے وزارت صنعت و تجارت کی منظوری کے بعد یہ ہوٹل کھولا مگر اس کا نام، بورڈز ، فرنیچر سب کچھ کے ایف سی سے مشابہہ تھا۔پولیس حکام کا کہنا تھا کہ یہ ’’کے ایف سی‘‘ ہوٹل کی برانچ ہے مگر مالک کے مطابق یہ ’’حلال کے ایف سی‘‘ کی برانچ ہے جس کا آغاز ترکی سے ہوا تھا۔ پولیس کا کہنا ہے کہ یہ ریسٹورنٹ جعلی لائسنس پر کھولا گیا تھا۔

مزید جانئے: دنیا کا وہ ملک جہاں میکڈونلڈ کے فرنچ فرائز کا ایک پیکٹ 13ہزار روپے کا فروخت ہوتا ہے کیونکہ ۔۔۔

ریسٹورنٹ کے منیجر عباس پازوکی نے کہا ہے کہ’’حلال کے ایف سی‘‘فوڈ چین کا تعلق مسلمانوں سے ہے اور مسلمان اقوام کی مارکیٹیں ہی اس برانڈ کا ہدف ہیں۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ ترکی کا یہ برانڈ امریکی کے ایف سی کا حریف ہے۔امریکی ٹی وی فوکس نیوز نے اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ بظاہر تہران میں جس ریسٹورنٹ کو بند کیا گیا ہے اس کا تعلق امریکی کے ایف سی سے لگتا ہے۔ ایرانی چیمبر آف کامرس کے سربراہ علی فاضلی نے بھی اگرچہ اس امر کی تصدیق کی ہے کہ جس ریسٹورنٹ کو بند کیا گیا ہے اس کا امریکی کے ایف سی سے کوئی تعلق نہیں ہے۔واضح رہے کہ ایران میں ہوٹلنگ کی صنعت میں مغربی برانڈز کی بہت زیادہ مخالفت موجود ہے اور لوگ نہیں چاہتے ہیں امریکہ یا کسی بھی مغربی ملک کی کوئی فوڈ چین یہاں اپنی برانچیں کھولے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -