رشتہ سے انکار پر جواں سال لڑکی اجتماعی زیادتی کے بعد قتل

رشتہ سے انکار پر جواں سال لڑکی اجتماعی زیادتی کے بعد قتل
رشتہ سے انکار پر جواں سال لڑکی اجتماعی زیادتی کے بعد قتل

  

قصور (ویب ڈیسک )رشتہ نہ دینے پر جواں سالہ لڑکی کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد بہیمانہ طریقے سے قتل کردینے والے ملزمان کےخلاف مقدمہ درج کرکے ان کی تلاش شروع کر دی گئی ۔

روزنامہ خبریں کے مطابق گلزار ٹاﺅن چھانگا مانگا کے محمد آصف نے پولیس کو بتایا کہ ملزم سہیل اور فیاض احمد کا تعلق بلاک نمبر 3 سے ہے ان درندہ صفت ملزمان اس کی ہمشیرہ شمیم بی بی کی شادی اپنے خاندان کے ایک نوجوان سے کرانا چاہتے تھے مگر ملزمان کے برے کردار اور جرائم پیشہ ہونے کی وجہ سے ان کے خاندان نے ملزمان کو رشتہ دینے سے صاف انکار کر دیا جس کاملزمان نے برا منایا اور وقوعہ کے روز ان کے گھر میں داخل ہوکر شمیم بی بی کو تنہا پاکر اسے باری باری جنسی درندگی کا نشانہ بنایا اور بعد ازاں اسے زبردستی زہر پلا دیا جس سے شمیم بی بی کی موت واقعہ ہوگئی.

پولیس نے اس امر کی اطلا ع ملنے پر رسمی کاروائی کی جس پر مقتولہ کے بھائی محمد آصف اور دوسرے رشتہ داروںنے عدالت کو شمیم بی بی کے دوبارہ پوسٹمارٹم کا حکم جاری کیا جس پر پولیس اور مجسٹریٹ کی نگرانی میں ڈاکٹروں کی ایک ٹیم نے شمیم بی بی کی قبر کوشائی کرکے دوبارہ پوسٹمارٹم کیا تو یہ امر ثابت ہوگیا کہ زیادتی کے بعد زہر دیے جانے کی وجہ سے ہی شمیم بی بی کی ہلاکت ہوئی ہے جس پر پولیس نے محمد آصف کی درخواست پر ملزمان کے خلاف اجتماعی زیادتی اور قتل کا مقدمہ درج کرکے ان کی تلاش شروع کر دی ہے۔

مزید : جرم و انصاف /علاقائی /پنجاب /قصور