کمشنر لاہو ڈویژن کاچیمبر کے ساتھ مل کر مارکیٹ کمیٹیاں تشکیل دینے کا اعلان 

      کمشنر لاہو ڈویژن کاچیمبر کے ساتھ مل کر مارکیٹ کمیٹیاں تشکیل دینے کا ...

  



لاہور(این این آئی)کمشنر لاہور ڈویژن آصف بلال لودھی نے لاہور چیمبر کے ساتھ مل کر لوکل مارکیٹ کمیٹیاں تشکیل دینے کا اعلان کیا ہے جو مارکیٹوں کے مسائل کا جائزہ لیکر ان کے حل کے لیے سفارشات مرتب کریں گی۔ انہوں نے ان خیالات کا اظہار لاہور چیمبر کے صدر عرفان اقبال شیخ، سینئر نائب صدر علی حسام اصغر، نائب صدرمیاں زاہد جاوید احمد اور ایگزیکٹو کمیٹی اراکین سے ملاقات میں کیا۔ لاہور چیمبر کے سابق صدر محمد علی میاں، اشرف بھٹی، وقار احمد میاں، سہیل سرفراز منج اور دیگر تاجر رہنماؤں نے بھی اس موقع پر خطاب کیا۔ کمشنر نے کہا کہ لاہور چیمبر کے ساتھ مل کر مارکیٹوں کے وزٹ بھی کیے جائیں گے، پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ کے تحت مارکیٹوں کو ان کی اصل صورت میں بحال کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ لاہور شہر واسا، ایل ڈی اے، والڈ سٹی اور دیگر بہت سی ایجنسیوں میں تقسیم ہے جن کے درمیان کوآرڈینیشن کے لیے سخت محنت کی جارہی ہے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے بتایا کہ انڈسٹریل زوننگ کا مسئلہ جلد ہی حل ہوجائے گا۔ لاہور چیمبر کے صدر عرفان اقبال شیخ نے کہا کہ لاہور کی مارکیٹوں کے آس پاس نئے پارکنگ پلازے ترجیحی بنیادوں پر تعمیر کیے جائیں تاکہ ٹریفک کے مسائل حل ہوسکیں، نجی شعبے کو بھی اس میں شراکت دار ہونے کی اجازت ہونی چاہئے، جہاں مناسب جگہ دستیاب نہیں ہے وہاں روٹری پارکنگ کے ذریعے بھی اس مسئلے سے نمٹا جاسکتا ہے۔انہوں نے کہا کہ لاہور شہر کے بازاروں میں تجاوزات ایک سنگین مسئلہ ہے۔حکومت کی جانب سے اچھی کاوشوں کے باوجود یہ مسئلہ اب بھی قائم ہے،ان تجاوزات کوفوری طور پرختم کرنے کی ضرورت ہے۔لاہور چیمبر کے صدر نے کہا کہ ڈینگی وبائی صورت اختیار کر چکا ہے،اگرچہ حکومت اس مسئلے پر قابو پانے کے لئے پوری کوشش کر رہی ہے لیکن ابھی تک مطلوبہ نتائج حاصل نہیں ہو سکے، لاہور کے متعلقہ اداروں کو چاہئے کہ اس موذی مرض پر قابو پانے کے لئے بروقت حفاظتی اقدامات کریں تاکہ صورتِ حال ہر لحاظ سے قابو میں رہے، اس حوالے سے آگاہی مہم کا دائرہ کار مزید وسیع کرنا بہت ضروری ہے۔

انہوں نے کہا کہ قائد اعظم انڈسٹرئیل اسٹیٹ اور سندر انڈسٹرئیل اسٹیٹ میں نئی انڈسٹری لگانے کی گنجائش ختم ہوچکی ہے، شہر کے دیگر حصوں میں بھی نئے انڈسٹریل یونٹس کے لیے جگہ نہیں۔

 لاہور چیمبر کئی جگہوں کی نشاندہی بھی کی ہے جہاں نئی انڈسٹریل اسٹیٹس قائم کی جاسکتی ہیں۔ عرفان اقبال شیخ نے کہا کہ لاہور میں ماحولیاتی آلودگی کا مسئلہ شدت اختیار کررہا ہے، اس سلسلے میں موثر اقدامات کی ضرورت ہے۔

 انہوں نے تجویز دی کہ لاہور چیمبر اور کمشنر آفس کے باہمی اشتراک سے ایک کمیٹی قائم کی جائے جس کی معیاد ایک سال ہو، اس کمیٹی میں واسا، ایل ڈی اے اور پولیس ڈیپارٹمنٹ کے نمائندگان شامل کیے جائیں۔ سینئر نائب صدر علی حسام اصغر اور نائب صدر میاں زاہد جاوید احمد نے کہا کہ ضلعی حکومت کی انتظامی کمیٹیوں میں لاہور چیمبر کو نمائندگی دی جائے تاکہ کاروباری مسائل کو حل کرنے میں نجی شعبہ کی مشاورت کو بھی یقینی بنایا جاسکے۔ سابق صدر محمد علی میاں نے کہا کہ ماحولیاتی آلودگی کے خاتمے اور کلین اینڈ گرین پاکستان کے لیے سب کو مل کر کوششیں کرنی چاہئیں، لاہور چیمبر اس سلسلے میں ایک قدم آگے ہے۔ انہوں نے کہا کہ نئے پودے لگانے کے ساتھ پہلے سے لگائے گئے پودوں کی دیکھ بھال بھی ضروری ہے۔ 

مزید : کامرس


loading...