سابق صدر آصف علی زرداری کی رہائی؟

سابق صدر آصف علی زرداری کی رہائی؟

  



اسے سوءِ اتفاق کے سوا کیا کہا جائے کہ پاکستان کے دو سابق وزرائے اعظم…… جناب نواز اور جناب شاہد خاقان عباسی…… کے ساتھ ساتھ سابق صدرِ پاکستان جناب آصف علی زرداری بھی نیب کے قیدی ہیں۔ان کی صحت کے معاملات بھی تشویشناک ہیں۔پیپلزپارٹی کے رہنماؤں کا مطالبہ ہے کہ اُنہیں وہ تمام سہولتیں فراہم کی جائیں،جو سابق وزرائے اعظم کو دی جا رہی ہیں کہ وہ دونوں نجی ہسپتالوں میں زیر علاج ہیں۔جنابِ زرداری کی سیاست سے کوئی جو بھی اختلاف کرے، ان کے قد کاٹھ سے انکار نہیں ہو سکتا۔محترمہ بے نظیر بھٹو کی شہادت کے بعد انہوں نے ”پاکستان کھپے“ کا نعرہ لگا کر سندھ کے انتہا پسندوں کی بھڑکائی ہوئی آگ پر پانی ڈالا تھا، اور محبوبِ نظر بن گئے تھے۔ان کی حیثیت اِس وقت زیر تفتیش ملزم کی ہے۔واقفانِ حال جانتے ہیں کہ ان کو متعدد بیماریاں لاحق ہیں،ان کے علاج میں ذرا سی کوتاہی بڑے نقصان کا سبب بن سکتی ہے۔اسلام آباد ہائی کورٹ کے فیصلے کی روشنی میں انتظامیہ کو ان کی رہائی کے فوری احکامات جاری کر دینے چاہئیں۔ سندھ سے تعلق رکھنے کی وجہ سے ان کے معاملے میں سندھ حکومت کو بھی حکم جاری کرنے کا مجاز ہونا چاہیے۔بہرحال اسلام آباد، لاہور یا کراچی میں موجود جس بھی حکومت کا دائرہ اختیار ہے، وہ فوری اقدام کرے۔

مزید : رائے /اداریہ


loading...