کسان بچاؤ تحریک کا گنے کے ریٹ کا نوٹیفیکیشن جاری نہ کرنے پر تشویش 

  کسان بچاؤ تحریک کا گنے کے ریٹ کا نوٹیفیکیشن جاری نہ کرنے پر تشویش 

  



لاہور(سٹی رپورٹر) کسان بچاؤ تحریک کی ایک ہنگامی میٹنگ میں حکومت کی جانب سے ابھی تک گنے کا ریٹ مقرر کرکے نوٹیفیکیشن جاری نہ کرنے پر سخت تشویش کا اظہار کیا گیا. کسانوں رہنماؤں نے ضلعی اور تحصیلوں کی سطح تک احتجاجی پروگرام ترتیب دے دیا. احتجاجی پروگرام کو صوبائی اور ملک گیر سطح تک پھیلا کر چلانے کی حکمت عملی مرتب کی جا رہی ہے.جس کا باقاعدہ اعلان کسان بچاؤ تحریک کے چیئرمین چودھری محمد یسین اپنے تحریکی ساتھیوں،ایم پی اے چودھری محمد ارشد، سید محمود الحق بخاری، جام ایم ایم ڈی گانگا،سید حامد رضا شاہ،  سید مظہر الحق بخاری، چودھری جمیل ناصر، ملک اللہ نواز مانک، عبدالصمد، فیصل منصور چودھری، جام احمد ستار لاڑ، چودھری نصیر وڑائچ، شہزاد ابرار سلیمی، حافظ محمد طارق، جام فضل احمد گانگا، منور چودھری، جام یسین وغیرہ کے ہمراہ مورخہ 11 نومبر کو پریس کلب لاہور میں کریں گے. احتجاجی پرو گرام کا شیڈول لائحہ عمل اور مراحل سمیت تمام تفصیلات اسی روز جاری کر دی جائیں گی. چودھری محمد یسین  نے کہا کہ کسانوں کے صبر کا پیمانہ لبریز ہو چکا ہے.کسان اپنے معاشی قتل ہوتے اب مزید برداشت نہیں کر سکتے. انہوں نے  اپنے کسان بھائیوں سے کہا ہے کہ وہ سستے داموں گنا ہرگز فروخت نہ کریں. گنے کی کم کاشت کے ساتھ ساتھ اس سال دیگر فصلات کپاس، چاول، مکئی کی طرح گنے کی پیداوار بھی کم ہے. اگر سرکاری طور پر گنے کی قیمت نہیں بڑھائی جاتی تو کسان اگلے سال گنے کی کاشت مزید کم کریں. وہ لوگ جو کل اور پرسوں یہ کہتے تھے کہ شوگر مافیا کا سرغنہ میاں نواز شریف اور آصف علی زرداری ہے. ان کی حکومت ہے انہیں کی ملیں ہیں وہی گنے کا ریٹ نہیں بڑھنے دے رہے. ہم کسان آج موجودہ حکمرانوں سے پوچھتے ہیں کہ ہمیں بتایا جائے کہ آجکل شوگر مافیا کا ڈان اور سرغنہ کون ہے. چینی کا ریٹ بڑھا کر 75روپے فی کلو کرنے والی حکومت کے ہاتھ گنے کا ریٹ بڑھانے سے کس نے روک رکھے ہیں۔

 کسانوں کا استحصال کون کر اور کروا رہا ہے.

مزید : کامرس


loading...